The news is by your side.

Advertisement

پیمرا مانع حمل اشتہارات نشر کرنے پر لگائی گئی پابندی ہٹا لی

اسلام آباد: پاکستان ریگولیٹری اتھارٹی نے جمعرات کوایک نوٹیفیکیشن کے ذریعے مانع حمل اور خاندانی منصوبہ بندی کی مصنوعات کےاشتہارات نشرکرنے پرپابندی عائد کی تھی،تاہم اب نوٹیفیکیشن واپس لے کر پابندی ختم کر دی گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق پیمرا نے ہفتہ کے روز نظرثانی کردہ نوٹس جاری کیا ہے، جس میں وضاحت کی گئی ہے کہ جب تک اتھارٹی کی جانب سے واضع پالیسی تشکیل نہیں دے دی جاتی،مانع حمل اشتہارات پر پابندی عائد نہیں کر سکتے،پیمرا بورڈ اب اس معاملے پر غور کرنے کے بعد “پالیسی” جاری کرے گا۔

نظر ثانی کردہ نوٹس میں ہدایت کی گئی کہ پرائم ٹائم کے اقات کار میں زیادہ تر بچے ٹی وی دیکھا کرتے ہیں اس لیے مانع حمل اشتہارات کو پرائم ٹائم میں نشر نہیں کیا جائے،جب کہ اس طرح کے اشتہارات میں زبان اور تصاویر کا مقامی ثقافتی اقدار کے مطابق خیال رکھا جائے۔

یا د رہے پیمرا نے جمعرات کو گزشتہ نوٹیفکیشن میں عام عوامی شکایات کے پیشِ نظر مانع حمل اشتہارات پر پابندی عائد کردی تھی،پیمرا کے مطابق ان مصنوعات کے اشتہارات نشر ہونے سے معصوم بچوں کے ذہنوں پر پڑنے والے اثرات کی وجہ سے والدین بہت زیادہ تحفظات کا شکار تھے۔


پیمرا نے ہندی کارٹون اور مانع حمل اشتہارات پر پابندی عائد کردی


واضع رہے کہ پیمرا ریگولیٹری باڈی نے خبردار کیا تھا کہ ان ہدایات پر عمل نہ کرنے والے میڈیا اداروں کے خلاف پیمرا قوانین کے تحت قانونی کارروائی کی جائے گی۔ تاہم سول سوسائٹی اور سوشل میڈیا پر تنقید کے بعد اتھارٹی نے ہفتے کو اس پابندی کو ختم کردیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں