The news is by your side.

Advertisement

موبائل فون صارفین کو سو روپے کے کارڈ پر سو روپے کا بیلنس ملتا رہے گا

اسلام آباد: موبائل فون صارفین کے لیے اچھی خبر سامنے آگئی مزید چند دن سو روپے کے کارڈ پر سو روپے کا بیلنس ملتا رہے گا۔

تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس آف پاکستان نے ایک ہفتے قبل موبائل کارڈز پر عائد کمپنیوں کی جانب سے از خود ٹیکسز کو کالعدم قرار دیا تھا جس کے بعد موبائل فون کمپنیوں نے عدالتی حکم پر سو روپے کے کارڈ پر سو روپے کا بیلنس دینے کا اعلان کیا تھا۔

ذرائع کا کہنا ہے موبائل فون کارڈ پر ٹیکس کٹوتی کا نیا میکنیزم سپریم کورٹ میں آئندہ سماعت کے بعد نافذ ہوگا اس وقت تک صارفین سو روپے میں سو کا بیلنس حاصل کرتے رہیں گے۔

ذرائع کا کہنا تھا کہ آئندہ ہفتے سپریم کورٹ میں موبائل فون کارڈز کیس کی سماعت متوقع ہے، پندرہ دن کے لیے موبائل فون کارڈز پر ٹیکس کٹوتی کی پابندی آج ختم ہونے والی تھی۔


ٹیکس کٹوتی ختم:‌ موبائل کمپنیوں کا 100روپےکےموبائل کارڈپر100روپےکےلوڈ کا اعلان


واضح رہے کہ 3 مئی کو چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار نے موبائل کارڈ کے ریچارج پر رقم کی کٹوتی کا ازخود نوٹس لیتے ہوئے تمام موبائل کمپنیوں کو نوٹس جاری کئے تھے۔

چیف جسٹس آف پاکستان کا کہنا تھا کہ 100روپے کے کارڈ یا بیلنس پر 40 روپے کاٹ لیے جاتے ہیں، اتنا زیادہ ٹیکس کس قانون کے تحت اورکس مد میں لیا جاتا ہے؟

خیال رہے کہ پاکستان میں موجود موبائل فون کمپنیاں 100 روپے کے ری چارج پر 40 روپے کی کٹوتی کرتی ہیں جس میں سروس چارجز اور ٹیکس کی رقم شامل ہے، صارفین کا دیرینہ مطالبہ تھا کہ کمپنیوں کی جانب سے کٹوتی زیادتی اور ظلم ہے جس پر کوئی اُن سے جواب طلب نہیں کرتا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں