The news is by your side.

Advertisement

عوام نے دو ماہ میں 40ہزار والے 176 ارب روپے مالیت کے بانڈز فروخت کر دیئے

لاہور : عوام نے دو ماہ میں40ہزار والے 176 ارب روپے مالیت کے بانڈز فروخت کر دیئے جبکہ نام سے رجسٹرڈ 40 ہزار والے بانڈز میں 7 ارب 10 کروڑ روپے کی نئی سرمایہ کاری ہوئی۔

تفصیلات کے مطابق کالے دھن سے بانڈز کی خریداری کرنے والوں کے خلاف گھیرا تنگ کرنے اور معیشت کو دستاویزی بنانے کی خاطر حکومت نے 40
ہزار روپے والے بانڈز کو بند کرنے کا فیصلہ کیا، جس کے بعد عوام نے دھڑا دھڑ بانڈز فروخت کرنا شروع کر دیئے۔

جون اورجولائی میں عوام نے 40 ہزار روپے والے 176 ارب روپے کے بانڈز فروخت کیے ۔حکومتی اعلان سے قبل 40 ہزار والے بانڈز میں 258 ارب روپے کی سرمایا کاری تھی جو کم ہو کر اب صرف 82 ارب روپے تک رہ چکی ہے۔

اس عرصے میں نام سے رجسٹرڈ 40 ہزار والے بانڈز میں 7 ارب 10 کروڑ روپے کی نئی سرمایہ کاری ہوئی اس طرح جولائی کے آخر تک نام سے رجسٹرڈ بانڈز میں کل سرمایہ کاری کا حجم 13 ارب 28 کروڑ روپے تک پہنچ گیا۔

دو ماہ میں مجموعی طور پر بانڈز میں سرمایا کاری 951 ارب روپے سے کم ہوکر 766 ارب روپے تک رہ گئی ہے۔

یاد رہےاسٹیٹ بینک نے 40 ہزار روپے مالیت کے پرانے رجسٹرڈ پرائز بانڈ کی خرید و فروخت بند کردی تھی اور انہیں تبدیل کرانے کی آخری تاریخ 31 مارچ 2020 ہے۔

ذرائع کا کہنا تھا  پرانے پرائز بانڈز کی اب کوئی قرعہ ندازی بھی نہیں ہوگی، پرانے پرائز بانڈ کو کیش بھی نہیں کیا جائے گا تاہم بانڈ قومی بچت کے سرٹیفکیٹ میں تبدیل کرائے جاسکتے ہیں۔

پرانے پرائز بانڈ پریمیم پرائز بانڈ میں بھی رجسٹرکرا ئے جاسکتےہیں۔ اس سلسلے میں فارم بھرکررقم بانڈکےمالک کےاکاؤنٹ میں منتقل کی جاسکےگی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں