The news is by your side.

Advertisement

قیوم آباد کے قریب ندی میں پھنسے افراد کو بچا لیا گیا

کراچی: شہرقائد کے علاقے قیوم آباد کے قریب ندی میں پھنسے افراد کو بچا لیا گیا، تحریک انصاف کے رہنماؤں نے مزدوروں کو ریسکیو کرنے میں اہم کردار ادا کیا۔

تفصیلات کے مطابق ٹھٹھہ سے آئے مزدور قیوم آباد ندی کے قریب سیلابی ریلے میں پھنس گئے تھے۔ مکینوں نے اپنی مدد آپ کے تحت مزدوروں کو ریسکیو کیا، اس دوران پی ٹی آئی کے سینئر اراکین بھی موجود ہے۔

پی ٹی آئی ارکان سندھ اسمبلی حلیم عادل شیخ اور راجہ اظہر متاثرہ مزدروں کی آواز بنے۔

راجہ اظہر کا کہنا تھا کہ وزیراعلیٰ کو فون کیا تو انہوں نے ریسیو کرنا گوارا نہیں کیا، اللہ کا شکر ہے کہ مزدوروں کی جان بچانے میں کامیاب رہے، ناصرشاہ کو فون کیا تو انہوں نے تسلی دی مگر ریسکیو نہیں کیا۔

کےالیکٹرک کے 88فیڈر اور 40پی ایم ٹیز ٹرپ کرگئیں

انہوں نے مزید کہا کہ دھرتی ماں کے لعل یہاں ڈوبتے رہے لیکن سندھ حکومت نے مدد نہیں کی۔

خیال رہے کہ کراچی میں اگست کے مہینے میں مون سون بارشوں کا 36 سالہ ریکارڈ ٹوٹ گیا، اس سے قبل فیصل بیس میں سب سے زیادہ بارش 1984 میں 298.4 ملی میٹر ریکارڈ کی گئی تھی۔

محکمہ موسمیات کے مطابق رواں ماہ اگست میں اب تک فیصل بیس میں 345 ملی میٹر بارش ریکارڈ کی گئی۔ جاری کردہ اعدادو شمار کے مطابق مسرور بیس میں سب سے زیادہ بارش 2007 میں 272 ملی میٹر ریکارڈ ہوئی تھی جبکہ رواں ماہ اب تک مسرور بیس میں 228.5 ملی میٹر ریکارڈ ریکارڈ ہوئی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں