site
stats
خیبر پختونخواہ

فاٹا کے مستقبل کا فیصلہ عوامی رائے سے کیا جائےگا، مولانا فضل الرحمان

Ulma Convention

اسلام آباد : جمعیت علمائے اسلام کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے کہ قبائلی علاقوں کےمستقبل پرفاٹا اصلاحاتی رپورٹ مکمل ہوچکی ہے جس کے بعد فاٹا اصلاحاتی رپورٹ پرمخالفت کا باب بند ہوچکا ہے۔

جمعیت علمائے اسلام کے سربراہ نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ قبائلی علاقوں کے مستقبل پر فاٹا اصلاحاتی رپورٹ مکمل ہو چکی ہے اور کمیٹی کی رپورٹ سے انضمام کا لفظ ہمارے مطالبے پر خارج کیا گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ کہ کمیٹی کی رپورٹ کےمطابق فاٹا کو قومی دائرے میں لایاجائےگا اور حکومت فاٹا کے عوام کے ساتھ وسیع ترمشاورت کے بعد ان کے مستقبل کا فیصلہ کرے گی۔

مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ جو لوگ فاٹا کو خیبر پختونخواہ میں شامل کرنا چاہتے ہیں انہیں چاہیے کہ پہلے فاٹا کے عوام سے ان کی رائے معلوم کر لیں اس کے بعد کوئی فیصلہ لاگو کریں۔

انہوں نے کے پی کے حکومت کو ہدفِ تنقید بناتے ہوئے کہا کہ عمران خان کو احتجاجی دھرنوں اور الزامات کی سیاست سے کچھ وقت ملے تو خیبر پختونخواہ پر بھی تھوڑا توجہ دیں۔

مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ الزامات کی سیاست کر کے عدلیہ کا قیمتی وقت برباد کیا جا رہا ہے جب کہ قوم کو پہلے ہی لاحاصل بحث کے پیچھے لگا دیا گیا ہے جس سے ملک میں غیر یقینی صورتِ حال پیدا ہو گئی ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top