ڈیفالٹر ہوں نہ ’ہوتی سی این جی اسٹیشن‘ سے کوئی تعلق ہے، پرویز خٹک -
The news is by your side.

Advertisement

ڈیفالٹر ہوں نہ ’ہوتی سی این جی اسٹیشن‘ سے کوئی تعلق ہے، پرویز خٹک

نوشہرہ: سابق وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا اور پی ٹی آئی رہنما پرویز خٹک نے امیدواروں کی اسکروٹنی رپورٹ پر رد عمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ وہ نادہندہ نہیں ہیں۔

تفصیلات کے مطابق پرویز خٹک نے ’ہوتی سی این جی اسٹیشن‘ کی ملکیت کی بھی تردید کردی ہے، ان کا کہنا ہے کہ سی این جی اسٹیشن سے ان کا کوئی تعلق نہیں ہے۔

سابق وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا پرویز خٹک نوشہرہ میں اے آر وائی نیوز سے گفتگو کر رہے تھے، انھوں نے کہا کہ سی این جی اسٹیشن جے یو آئی کے پرویز خٹک کا ہے۔

پاکستان تحریک انصاف کے رہنما نے واشگاف الفاظ میں کہا کہ ’میرا کوئی سی این جی اسٹیشن نہیں ہے‘ اس حوالے سے نام کی مماثلت کی وجہ سے غلط فہمی پیدا ہوئی ہے۔

پرویز خٹک کا کہنا تھا کہ مجھے 10 کروڑ کے ڈیفالٹر ہونے کا میڈیا سے پتا چلا، اس خبر میں کوئی صداقت نہیں ہے، میں ایک روپے کا بھی ڈیفالٹر نہیں ہوں۔

پرویز خٹک 10 کروڑ 65 لاکھ 75 ہزار کے نادہندہ نکلے


انھوں نے کہا کہ اس سلسلے میں پروپیگنڈا کرنے والی جماعتوں کو انتخابات کے میدان میں شکست سے دوچار کروں گا، مرکز اور صوبے میں حکومت پی ٹی آئی کی ہوگی۔

واضح رہے کہ سوئی نادرن گیس پائپ لائنز لمیٹڈ (SNGPL) نے الیکشن کمیشن کی جانب سے امیدواروں کی اسکروٹنی کے لیے اپنی رپورٹ تیار کرکے الیکشن کمیشن کو بھجوائی جس میں حامد سعید کاظمی اور فضل الرحمان سمیت پرویز خٹک بھی دس کروڑ روپے سے زائد کے نادہندہ قرار دیے گئے ہیں۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں