The news is by your side.

Advertisement

پرویزمشرف کا مئی میں وطن واپسی کا عندیہ

اسلام آباد: سابق صدر جنرل ( ر) پرویز مشرف کے وکیل نے خصوصی عدالت میں عندیہ دیا ہے کہ ان کے موکل 13 مئی کو وطن واپس آکر عدالت کے روبرو پیش ہوسکتے ہیں۔

تفصیلا ت کے مطابق آج سابق صدر پرویز مشرف کے خلاف خصوصی عدالت میں سماعت ہوئی، جسٹس طاہرہ صفدر نے سماعت 13 مئی تک ملتوی کرنے کی درخواست مسترد کردی۔

سابق صدر کے وکیل کی جانب سے خصوصی عدالت میں کہا گیا کہ تھا کہ ان کے موکل پرویزمشرف کوجوبیماری ہےاس میں کیمو تھراپی اور خون تبدیل ہوتا ہے۔پرویزمشرف کو جو بیماری ہے وہ لاکھوں میں کسی ایک کو ہوتی ہے۔ انہوں نے استدعا کی تھی کہ کیمو تھراپی کےبعد13 مئی کی تاریخ دے دی جائے تو ان کے موکل ایک ہفتہ پہلے آسکتے ہیں ۔

تاہم خصوصی عدالت نے ان کی درخواست مسترد کرتے ہوئے سماعت کے لیے دو مئی کی تاریخ مقرر کردی ہے، عدالت کی جانب سے ریمارکس میں کہا گیا کہ 13 مئی کو رمضان شروع ہوچکے ہوں گے ، دوسرے شہر سے آکر عدالت کا انعقاد کرنا مشکل ہوتا ہے

۔ عدالت نے ملزم کے وکیل سے کہا ہے کہ سوالنامہ فراہم کررہے ہیں، جواب تیار کرلیں۔ 2 مئی کو پرویز مشرف حاضر ہوئے تو اپنا بیان ریکارڈ کرائیں گے ، اگر مقررہ تاریخ پر سابق صدر حاضر نہ ہوئے تو ان کے خلاف قانونی کے مطابق کارروائی ہوگی۔

عدالت نے پرویز مشرف کے خلاف درج مقدمہ ختم کرنے کی درخواست بھی واپس کردی اور کہا کہ یہ درخواست رجسٹرار آفس میں جمع کرائی جاسکتی ہے۔درخواست قانون کے مطابق ہمارے سامنے آئی تو ہم کارروائی کریں گے۔

خصوصی عدالت نے حکم دیا کہ سوالنامےکی کاپیاں فریقین کو فراہم کی جائیں۔ اس کے ساتھ ہی عدالت برخاست کردی گئی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں