The news is by your side.

Advertisement

پرویز رشید نے جج ویڈیو اسکینڈل میں بیان ریکارڈ کرا دیا

عظمیٰ بخاری کے وکیل نے آیندہ تاریخ کے لیے درخواست دے دی

لاہور: پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما پرویز رشید نے جج بلیک میلنگ ویڈیو اسکینڈل کی تحقیقات کے سلسلے میں اپنا بیان ایف آئی اے کے سامنے ریکارڈ کرا دیا۔

تفصیلات کے مطابق آج لاہور ایف آئی اے آفس میں طلب کیے جانے پر پرویز رشید نے اپنا بیان ریکارڈ کرا دیا، ایف آئی اے نے انھیں جج بلیک میلنگ اسکینڈل کی تحقیقات کے لیے طلب کیا تھا، لیگی رہنما عطا تارڑ پہلے ہی پیش ہو کر بیان ریکارڈ کرا چکے ہیں۔

ایف آئی اے نے لیگی رہنما عظمیٰ بخاری کو بھی طلب کر رکھا ہے، تاہم عظمیٰ بخاری کے وکیل نے آیندہ تاریخ کے لیے درخواست دے دی، جس میں کہا گیا کہ عظمیٰ بخاری بیرون ملک ہونے کے باعث پیش نہیں ہو سکتیں، بیرون ملک سے واپسی پر پیش ہوں گی۔

قبل ازیں، پرویز رشید اپنا بیان ریکارڈ کرانے ایف آئی اے آفس پہنچے تو میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انھوں نے حیرت کا اظہار کیا کہ اتنی سیکورٹی لگا دی گئی ہے، کیا کشمیر فتح کرنا ہے، ایف آئی اے کا جو کام نہیں ہے وہ اس سے لینے کی کوشش کی جا رہی ہے، اسی طرح نیب کا جو کام ہے اس وہ نہیں لیا گیا۔

جج ویڈیو اسکینڈل؛ پرویز رشید اور عظمیٰ بخاری طلب

پرویز رشید نے کہا کہ اے این ایف بھی حنیف عباسی، رانا ثنا اللہ کیس میں ناکام ہوئی، اب ایف آئی اے کو سیاسی انتقام کے لیے استعمال کیا جا رہا ہے، کیا حکومت کا کام یہی ہے کہ اداروں کو ناکامی کا سرٹیفکیٹ دلاتی رہے، جھوٹے الزامات پر گرفتار لوگوں کو عدالتوں سے انصاف ملا۔

اپنا بیان ریکارڈ کرانے کے بعد ان کا کہنا تھا کہ ایف آئی اے نے مجھ سے کہا ہم دوبارہ بلائیں گے، میں نے کہا حاضر ہو جاؤں گا، میں نے ایف آئی اے سے کہا آپ کی مدد سے سیاسی انتقام لیا جا رہا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں