The news is by your side.

Advertisement

پشاور میں مدرسے کا طالبعلم مبینہ تشدد سے جاں بحق

ایبٹ آباد میں مویشی باغ میں آنے پر بااثر افراد کا 7 سالہ بچے پر بہیمانہ تشدد

پشاور: صوبہ خیبرپختونخوا میں مدرسے کے گیارہ سالہ طالب علم نامعلوم افراد کے مبینہ تشدد سے جاں بحق ہوگیا۔

اے آر وائی نیوز کی رپورٹ کے مطابق پشاور کے علاقے یکہ توت میں مدرسے کا گیارہ سالہ طالب علم نامعلوم افراد کے مبینہ تشدد جاں بحق ہوگیا، اطلاع ملتے ہی پولیس نے مدرسے سے لاش برآمد کرکے 4 ملزمان کو گرفتار کرلیا۔

پولیس کے مطابق ملزمان نے لڑکے کے گلے میں رسی ڈال کر قتل کو خودکشی کا رنگ دینے کی کوشش کی۔

پولیس کا کہنا ہے کہ مدرسے کی مسجد کے پیش امام کو بھی شامل تفتیش کرلیا گیا ہے جبکہ مقتول کی لاش کو ضابطے کی کارروائی کے لیے اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔

ادھر ایبٹ آباد میں مویشی باغ میں آنے پر بااثر افراد نے 7 سالہ بچے نعمان کو بدترین تشدد کا نشانہ بنا ڈالا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ ایبٹ آباد کے نواحی علاقے بیرن گلی کے رہائشی 7 سالہ نعمان پر بااثر افراد نے مویشی باغ میں آنے پر بدترین تشدد کا نشانہ بنایا، تشدد سے بچے کے جسم پر نشانات پڑ گئے۔

ڈی پی او ایبٹ آباد یاسر آفریدی نے واقعہ کا فوری نوٹس لینے کے بعد پولیس نے تمام ملزمان کو گرفتار کرلیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں