The news is by your side.

Advertisement

پشاور دھماکا خودکش قرار، پولیس کے 2 جوان بھی شہید

پشاور: پشاور کے تاریخی قصہ خوانی بازار کو ایک بار پھر خون میں نہلادیا گیا، پولیس نے دھماکے کو ‘خود کش’ حملہ قرار دے دیا ہے۔

ایس ایس پی آپریشنز ہارون رشید نے میڈیا سے گفتگو میں بتایا کہ کوچہ رسالدار میں واقع جامع مسجد میں آج ایک نامعلوم خودکش حملہ آور نے نماز جمعہ کے وقت داخلے کی کوشش کی، اس دوران سیکیورٹی پر مامور پولیس اہلکاروں اور خود کش حملہ آور کے درمیان فائرنگ کا تبادلہ ہوا۔

ایس ایس پی آپریشنز نے بتایا کہ حملہ آور کی فائرنگ سے ایک اہلکار موقع پر ہی شہید جبکہ دوسرا شدید زخمی ہوا، بعد ازاں حملہ آور اسلحہ لہراتے ہوئے مسجد میں داخل ہوگیا اور منبر کے قریب جاکر خود کو دھماکے سے اڑالیا۔

واقعے کے بعد شدید زخمی پولیس اہلکار کو طبی امداد کے لئے لیڈی ریڈنگ اسپتال منتقل کیا گیا، جہاں وہ دوران علاج دم توڑ گیا۔

یہ بھی پڑھیں:دھماکے کا کوئی تھریٹ الرٹ جاری نہیں ہوا تھا، شیخ رشید

ایس ایس پی آپریشنزہارون رشید نے میڈیا کو بتایا کہ مسجد پر سیکیورٹی تعینات تھی، سیکیورٹی نہ ہونے کی باتوں میں کوئی صداقت نہیں ہے۔

واضح رہے کہ آج نماز جمعہ کے وقت قصہ خوانی بازار میں واقع جامع مسجد کوچہ رسالدار میں دھماکا ہوا تھا، جس کے نتیجے میں 30 افراد شہید جبکہ 60 سے زائد زخمی ہوئے ہیں، شہید ہونے والوں میں بچے بھی شامل ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں