site
stats
بلوچستان

پشاور: بچے اغوا کرنے والا گروہ گرفتار، فی بچہ 1 لاکھ میں‌ فروخت

پشاور: پولیس نے بچے اغوا کرنے والے گروہ کی گرفتاری کا دعوٰی کیا ہے،گرفتار گروہ لیڈی ہیلتھ ورکرز پر مشتمل ہے، گروہ کے ارکان فی بچہ 70ہزار تا ایک لاکھ میں فروخت کرتے تھے، مردہ بچوں کو فریزر میں رکھ کر زندہ بچوں سے تبدیل کردیتے تھے۔

Dead children placed in freezers and replaced… by arynews

ڈیڑھ ماہ کی ایک بچی کے متعلق پشاور پولیس کا کہنا ہے اسے لیڈی ہیلتھ ورکر کے گروہ نے اغوا کیا۔ پشاور پولیس نے پانچ خواتین سمیت سات افراد کے گروہ کو میڈیا کے سامنے پیش کیا جو مبینہ طور پر اسپتالوں سے بچے اغوا کرنے میں ملوث ہے۔ پولیس نےبتایا فی بچہ ستر ہزارسے ایک لاکھ میں فروخت کیا جاتا۔ اغوا کی وارداتوں میں نجی کلینکس کی ڈاکٹرز بھی شامل ہیں۔

مبینہ اغوا کار گروہ کی سرغنہ نے دعوٰی کیا کہ پولیس اس پرکوئی الزام ثابت نہیں کرسکتی۔

واضح رہے کہ پشاور سمیت ملک بھرکے اسپتالوں میں اکثر نومولود بچوں کے اغوا کی وارداتیں ہوتی رہتی ہیں جب کہ پنجاب بھر میں بچوں کے اغوا کی وارداتیں اپنے عروج پر ہیں، کراچی میں بھی رواں سال 136بچوں کے لاپتا ہونے کے مقدمات درج ہوئے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top