ایم کیوایم پاکستان کے انٹراپارٹی الیکشن کیخلاف درخواست دائرMQM pakistan
The news is by your side.

Advertisement

ایم کیوایم بہادرآباد نے پی آئی بی کا انٹراپارٹی الیکشن چیلنج کردیا ، فاروق ستار 27 فروری کو طلب

اسلام آباد: ایم کیوایم بہادرآباد گروپ نے پی آئی بی کا انٹراپارٹی الیکشن چیلنج کردیا، جس  پر  الیکشن کمیشن نے ڈاکٹر فاروق ستار کو 27 فروری کو اسلام آباد طلب کر لیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق ایم کیوایم پاکستان کے انٹراپارٹی الیکشن کیخلاف درخواست دائر کردی گئی، درخواست کنور نوید جمیل کی جانب سے الیکشن کمیشن میں دائرکی گئی۔

درخواست میں مؤقف کیا گیا ہے کہ ایم کیوایم پاکستان نے غیرقانونی انٹراپارٹی انتخابات کرائے، یہ ایم کیو ایم پاکستان کے انٹرا پارٹی الیکشن نہیں، یہ کسی گروپ کے الیکشن ہو سکتے ہیں۔

جس کے بعد الیکشن کمیشن نے ڈاکٹر فاروق ستار کو 27 فروری کی صبح 10بجے کو اسلام آباد طلب کر لیا ہے اور ڈاکٹر فاروق ستار کو ہدایت کی ہے کہ وہ خود یا اپنے نمائندے کو الیکشن کمیشن بھیجیں اور ان کے نہ آنے کے علاوہ ان کی جانب سے کوئی نمائندہ پیش نہ ہونے کی صورت میں الیکشن کمیشن اپنا فیصلہ سنادے گا۔

یاد رہے 18 فروری کو ایم کیوایم پاکستان کے انٹراپارٹی الیکشن میں فاروق ستار نے 9 ہزار433 ووٹ لے کر ایک بار پھر کنوینرمنتخب ہوئے۔


مزید پڑھیں : ایم کیوایم انٹراپارٹی الیکشن میں فاروق ستارکنوینرمنتخب


ایم کیوایم پاکستان چیف الیکشن کمشنر نے کہا کہ آئین کے آرئیکل 18 سی کے تحت الیکشن ہوئے، انٹرا پارٹی الیکشن میں ٹوٹل 9 ہزار613 ووٹ کاسٹ، 163مسترد ہوئے۔

واضح رہے کہ کامران ٹیسوری کو سینٹ کی سیٹ دیئے جانے پر ایم کیو ایم اور رابطہ کمیٹی میں اختلاف مزید شدت اختیار کر گئے ہیں ، رابطہ کمیٹی نے فاروق ستارکو آؤٹ کرکے خالد مقبول کو کنوینر بنادیا۔

جس کے بعد ایم کیو ایم کے رہنما ڈاکٹر فاروق ستار نے رابطہ کمیٹی کے اختیارات اور اس کو تحلیل کرتے ہوئے نئے انٹرا پارٹی انتخابات کرانے کا اعلان کیا تھا اور کہا تھا کہ بہادرآباد والوں کے تمام اقدامات غیر آئینی ہیں۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں