The news is by your side.

Advertisement

خواجہ آصف سے تنخواہ اور مراعات واپس لینے کی درخواست دائر

اسلام آباد: اسلام آباد ہائی کورٹ میں خواجہ آصف سے تنخواہ اور مراعات واپس لینے کی درخواست دائر کردی گئی، جس میں خواجہ آصف کی سرکاری اورغیر سرکاری ادارے میں تقرری پر پابندی کی استدعا کی ہے۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ہائی کورٹ میں خواجہ آصف سے تنخواہ اور مراعات واپس لینے کی درخواست دائر کردی گئی ، درخواست گزار نے موقف اختیار کیا ہے کہ اسلام آباد ہائی کورٹ نے خواجہ آصف کو نااہل قرار دیا ہے لہذانام ای سی ایل میں ڈال کر تنخواہیں اور مراعات واپس لی جائیں۔

درخواست میں استدعا کی گئی ہے کہ خواجہ آصف کی سرکاری اورغیر سرکاری ادارے میں تقرری پربھی پابندی عائد کی جائے۔

یاد رہے کہ 26 اپریل کو وفاقی دارالحکومت اسلام آباد کی ہائی کورٹ نے وزیر خارجہ خواجہ آصف کو نااہل قرار دیا تھا۔


مزید پڑھیں : عدالت نے خواجہ آصف کو نااہل قرار دے دیا


سپریم کورٹ آرٹیکل 62 ون ایف کے تحت ہونے والی نااہلی کو تاحیات قرار دے چکی ہے، جس کے بعد نااہلی کے بعد خواجہ آصف اب نہ وزیر خارجہ رہے اور نہ وہ آئندہ انتخابات میں بھی حصہ نہیں لے سکتے۔

الیکشن کمیشن آف پاکستان نے اسلام آباد ہائی کورٹ کی جانب سے نااہلی کے فیصلے کے بعد سابق وزیر خارجہ اور مسلم لیگ ن کے رہنما خواجہ آصف کی قومی اسمبلی رکنیت ختم کرنے کا نوٹیفکیشن جاری کر دیا تھا۔

خیال رہے کہ خواجہ آصف کی نا اہلی کے لیے درخواست تحریک انصاف کے رہنما عثمان ڈار نے دائر کی تھی، درخواست میں مؤقف اختیار کیا گیا تھا کہ وزیر خارجہ دبئی میں ایک پرائیویٹ کمپنی کے ملازم ہیں جہاں سے وہ ماہانہ تنخواہ بھی حاصل کرتے ہیں۔ غیر ملکی کمپنی میں ملازمت کرنے والا شخص وزیر خارجہ کے اہم منصب پر کیسے فائز رہ سکتا ہے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں