The news is by your side.

Advertisement

نگراں حکومت کی ایک بار پھر عوام پر پٹرول بم گرانے کی تیاری

اسلام آباد: نگراں حکومت نے ایک بار پھر عوام پر پٹرول بم گرانے کی تیاری کرلی ہے، پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کی سمری وزراتِ خزانہ کو ارسال کردی۔

تفصیلات کے مطابق نگراں حکومت کی جانب سے وزارتِ خزانہ کو بھجوائے جانے والی سمری میں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں 7 روپے فی لیٹر اضافے کی تجویز دی گئی ہے۔

سمری میں جی ایس ٹی کے 2 مختلف ریٹس پر قیمتیں بڑھانے کی تجویز بھی دی گئی ہے، پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں یکم اگست سے بڑھنے کا امکان ہے۔

سمری کے مطابق موجودہ شرح کے حساب سے پٹرول 2 روپے 45 پیسے اور ہائی اسپیڈ ڈیزل کی قیمت میں 2 روپے 70 پیسے اضافہ متوقع ہے۔

مٹی کے تیل کی قیمت میں بھی 3 روپے 25 پیسے اضافے کا امکان ہے جب کہ سمری میں لائٹ ڈیزل 3 روپے 40 پیسے مہنگا کرنے کی سفارش کی گئی ہے۔

پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں ہوشربا اضافہ، پیٹرول 92روپے لیٹر تک جا پہنچا

نئے سیلز ٹیکس کے تحت پٹرولیم مصنوعات 7 روپے 40 پیسے مہنگی ہونے کا امکان ہے، تاہم نگراں حکومت قیمتوں میں اضافے کا حتمی فیصلہ کل کرے گی۔

واضح رہے کہ نگراں حکومت نے آتے ہی پٹرولیم مصنوعات میں اضافہ کر کے ملک میں مہنگائی کی ایک نئی لہر پیدا کر دی تھی، جس پر عمران خان سمیت دیگر سیاست دانوں نے بھی ردِ عمل ظاہر کیا تھا، موجودہ اضافے کی تجویز پر اگر عمل ہوتا ہے تو یہ تیسری مرتبہ کا اضافہ ہوگا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں