The news is by your side.

Advertisement

فائزر نے کرونا کی ایک کروڑ گولیاں امریکا کو دینے کا معاہدہ کر لیا

واشنگٹن: امریکی دوا ساز کمپنی فائزر نے کرونا وائرس کے علاج کی ایک کروڑ گولیاں امریکی حکومت کو دینے کا معاہدہ کر لیا۔

تفصیلات کے مطابق فائزر نے ایک کروڑ انسداد کرونا ٹیبلٹس امریکی حکومت کو دینے کا سوا پانچ ارب ڈالر کا معاہدہ کیا ہے، جس کے تحت فائزر کمپنی امریکی حکومت کو ایک کروڑ افراد کے لیے کرونا گولیاں فراہم کرے گی۔

دوا ساز کمپنی نے جمعرات کو کہا کہ فائزر نے امریکی حکومت کے ساتھ 5.29 بلین ڈالر کے معاہدے پر دستخط کیے ہیں، تاکہ رواں سال سے شروع ہونے والی اپنی کووِڈ 19 اورل اینٹی وائرل دوا کے 10 ملین کورسز فراہم کیے جا سکیں۔

منہ کے ذریعے کھائی جانے والی یہ دوا کرونا کے وبائی مرض کے خلاف جنگ میں ایک امید افزا نیا ہتھیار ثابت ہو سکتی ہے، کیوں کہ اسے کووِڈ 19 کے باعث اسپتال میں داخل ہونے کے کیسز میں کمی لانے، اور اموات کو روکنے میں مدد کے لیے ابتدائی گھریلو علاج کے طور پر لیا جا سکتا ہے۔

فائزر نے منگل کو اس دوا پیکس لووِڈ (Paxlovid) کے استعمال کی اجازت کے لیے ایف ڈی اے میں درخواست دی ہے، کمپنی کی جانب سے کہا گیا کہ وہ اگلے ماہ کے آخر تک علاج کے ایک لاکھ 80 ہزار کورسز اور 2022 کے آخر تک کم از کم 5 کروڑ کورسز تیار کرنے کی توقع رکھتی ہے۔

فائزر کمپنی نے اس ماہ کے اوائل میں کہا تھا کہ پیکس لووِڈ دوا شدید بیماری کے خطرے میں بالغ افراد کے لیے اسپتال میں داخل ہونے یا موت کے امکانات کو 89 فی صد کم کر دیتی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں