The news is by your side.

Advertisement

گریٹر اقبال پارک واقعہ، مینارِ پاکستان کی سیکیورٹی رینجرز کو دینے کی تجویز

لاہور : وائس چیئرمین پی ایچ اے حافظ ذیشان رشید نے مینارپاکستان کی تاریخی حیثیت کےپیش نظر سیکیورٹی رینجرز کودینے کی تجویز دے دی اور کہا مینار پاکستان پرمستقل بنیاد پر پولیس چوکی قائم کی جائے۔

تفصیلات کے مطابق گریٹر اقبال پارک واقعےسےمتعلق پی ایچ اے نے اصلاحات کا فیصلہ کرتے ہوئے وائس چیئرمین پی ایچ اے حافظ ذیشان رشید نے تجاویز مجاز اتھارٹی کو بھجوا دیں۔

وائس چیئرمین پی ایچ اے نے مینارپاکستان کی تاریخی حیثیت کےپیش نظر سیکیورٹی رینجرز کودینے کی تجویز دیتے ہوئے کہا ہے کہ مینار پاکستان اور دیگر بڑے پارکوں میں فیملیز کے لیے دن مختص کیے جائیں۔

حافظ ذیشان کا کہنا تھا کہ مینار پاکستان پرمستقل بنیاد پر پولیس چوکی قائم کی جائے اور ٹک ٹاکرز کواجازت کے بعد ہی پارکوں میں شوٹنگ کی اجازت دی جائے جبکہ ٹک ٹاکرز کو اپنے اسکرپٹ کی منظوری لینے کا پابند کیا جائے۔

گذشتہ روز پارکس اینڈہارٹیکلچر اتھارٹی پنجاب نے پارکوں میں ٹک ٹاکرز کے داخلے پر ‏پابندی عائد کرنے کا نوٹیفکیشن جاری کیا تھا، جس میں کہا تھا کہ ٹک ٹاکر کو پارکوں میں داخلے سے پہلے اجازت نامہ جمع کرانا ‏ہو گا اور باضابطہ اجازت نامے کے بعد انہیں ٹک ٹاک ویڈیو بنانے کی اجازت ہو گی۔

اتھارٹی کی جانب سے 2 سے زائد مردوں کے ایک ساتھ پارک میں داخلے پر پابندی پر بھی غور کیا ‏جارہا ہے تاہم فیملیز پر کوئی پابندیاں عائد نہیں کی جارہیں البتہ ایس او پیز پر سختی سے عمل ‏کرنا ہوگا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں