The news is by your side.

Advertisement

حکومتی اقدامات کے بعد فارما ایسوسی ایشن کا 395 ادویات کی قیمتوں میں کمی کا اعلان

کراچی: پاکستان فارما مینوفیکچرز ایسوسی ایشن نے حکومتی اقدامات اور دباؤ کے بعد 395 ادویات کی قیمتوں میں کمی کا اعلان کردیا۔

تفصیلات کے مطابق  پاکستان فارما مینوفیکچرر ایسوسی ایشن کے چیئرمین زاہد سعید نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے اعلان کیا کہ مختلف کمپنیوں نے 395 ادویات کی قیمتوں میں کمی پر رضا مندی ظاہر کردی۔ اُن کا کہنا تھا کہ وفاقی حکومت کے دباؤ پر ادویات کو پرانے ریٹ‌پر لایا جارہا ہے البتہ جان بچانے والی 464 ادویات کی قیمتوں‌ میں‌ اضافہ برقرار رکھا جائے گا۔

مزید پڑھیں: مہنگی ادویات کی فروخت کیخلاف کارروائیاں، ادویات کا بھاری اسٹاک ضبط

چیئرمین زاہد سعید کا کہنا تھا کہ گزشتہ ڈیڑھ سال سے ملک معاشی مشکلات کا شکار ہے روپے کی قدر میں بھی کمی ہوئی جس کے باعث لاگت بڑھی اسی لیے قیمتیں بڑھائی گئیں تھیں، ادویات کی قیمتیں پرانے ریٹ پر لانے سے ان پر منافع ختم ہوجائے گا۔ اُن کا کہنا تھا کہ گیس بجلی قیمتوں میں اضافہ اور روپے کی قدر میں کمی کی صورت میں ادویات کی قیمتوں میں اضافہ ناگزیر ہے۔

یاد رہے وزیر اعظم عمران خان نے ادویات کی قیمتیں بڑھانےوالوں کیخلاف کارروائی کاحکم دیتے ہوئے کہا تھا کہ 72گھنٹوں کے اندر ادویات کی قیمتوں کو پرانی سطح پر لایا جائے۔ وزیراعظم کا کہنا تھا عوامی خدمت کےمنصوبوں میں مکمل سہولت دی جائے، نئی ترقیاتی اسکیمزبھی ایک ماہ میں لےلی جائیں۔

خیال رہے کہ رواں سال دس جنوری کو تمام ادویات پر پندرہ فیصد اضافہ کیا گیا تھا، ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی کو تین ماہ بعد ادویات کی قیمتوں میں غیرقانونی اضافے کی یاد آئی۔ حال ہی میں ہولسیلرز اور ریٹیل میڈیکل اسٹورز نے ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی کی جاری کردہ قیمتوں کے خلاف ادویات کی قیمتوں میں سو فیصدسے زائد اضافہ کر دیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں: وفاقی حکومت کا ادویات کی قیمتوں میں اضافے پر بڑا فیصلہ

بعد ازاں وفاقی حکومت نے بعض دوا ساز کمپنیوں کی جانب سے ادویات کی قیمتوں میں از خود بلا جواز اضافے پر ایکشن لیتے ہوئے ادویات کی قیمتوں میں غیر قانونی اضافہ کرنے والی کمپنیوں کے خلاف کریک ڈاؤن کا حکم دیا۔ کریک ڈاؤن میں غیرقانونی طور پر ادویات کی قیمتوں میں اضافہ کرنے والی 31 دوا ساز کمپنیوں کے خلاف کارروائی کی گئی اور زائد قیمت وصولی پر 143 ادویات قبضے میں لے لی گئی تھیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں