The news is by your side.

Advertisement

5 سالہ بچہ پچاس سال کی عمر تک عجیب شوق پالتا رہا

منیلا: فلپائن کے ایک پانچ سالہ بچے کو جب پہلی بار ایک ریسٹورنٹ میں تحفے میں کھلونا ملا تو وہ خوشی سے پھولا نہ سمایا، لیکن یہ خوشی اتنی تھی کہ اس کے بعد سے کھلونے جمع کرنا اس کا اولین شوق بن گیا۔

تفصیلات کے مطابق فلپائن کے ایک شخص نے اپنے دل چسپ شوق کے سبب مختلف ریسٹورنٹس سے پینتالیس سال کے دوران 20 ہزار کھلونے جمع کر کے ایک ریکارڈ قائم کر لیا ہے۔

یہ فلپائنی ہیں ایک گرافک آرٹسٹ، جن کا نام پرسیول لُوگ ہے، اور یہ فاسٹ فوڈ سینٹرز سے کھانوں کے ساتھ بچوں کو تحفے میں ملنے والے کھلونے جمع کر کے گنیز بک آف ورلڈ ریکارڈز میں اپنا نام درج کرا چکے ہیں۔

کھلونے جمع کرنے کا عالمی ریکارڈ تو انھوں نے 2014 میں بنا لیا تھا، تاہم اب ان کھلونوں کی تعداد بڑھتے بڑھتے 20 ہزار سے بھی زائد ہو چکی ہے، جب کہ پرسیول کی عمر بھی 50 سال سے زائد ہو گئی ہے، انھوں نے 5 سال کی عمر سے کھلونے جمع کرنا شروع کیا تھا۔

جب انھیں پہلی بار کھانے کے ساتھ کھلونا ملا تو وہ بہت خوش ہوئے، پھر انھوں نے معروف برانڈز کے برگر اور فاسٹ فوڈ کھانے کا سلسلہ جاری رکھا اور اس کے عوض تحفے میں ملنے والے کھلونوں کو بھی جمع کرتے چلے گئے۔

فلپائن کے شہری کا گھرتین منزلہ ہے، جس کے ایک کمرے کو انھوں نے کھلونوں سے بھر کر رکھا ہوا ہے، اور وہ اب بھی ان کھلونوں کے ساتھ کھیلتے ہیں۔

پرسیول نے ان کھلونوں کے حوالے سے بڑی دل چسپ بات بتائی، انھوں نے کہا کہ ان میں سے ہر کھلونا کہانی نویس کی طرح ایک کہانی بیان کرتا ہے، اور یہ اس وقت کی یاد دلاتا ہے جس وقت اسے خریدا گیا تھا، صرف یہی نہیں بلکہ ان کھلونوں کے ساتھ کچھ نہ کچھ واقعات بھی منسلک ہوتے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں