site
stats
سندھ

خسارے کے باوجود پی آئی اے افسران کی شاہ خرچیاں عروج پر

کراچی : اربوں روپے خسارے سے دوچار قومی ایئرلائن پی آئی اے باکمال لوگوں کی لاجواب سروس بن گئی،قومی ایئر لائن کے افسران کی شاہ خرچیاں اپنے عروج پر ہیں، مالی خسارے کے باعث پی آئی اے سول ایوی ایشن اتھارٹی کو واجبات ادا کرنے سے بھی قاصر ہے۔

تفصیلات کے مطابق گزشتہ کئی ماہ سے اربوں روپے کے خسارے میں چلنے والی قومی ایئر لائن پی آئی اے کے افسران کی شاہ خرچیاں اپنے عروج پر ہیں۔

افسران کے بیرون ملک دوروں پر پی آئی اے کے کروڑوں روپے کے اخراجات کے باوجود محکمہ انفارمیشن ٹیکنالوجی کے افسران مہینے کے 24 دن بیرون ملک دوروں پر رہتے ہیں۔

بیرون ملک دوروں پر رہنے سے فی افسر 10ہزار ڈالر وصول کر رہا ہے جو ادارے پر مزید مالی بوجھ بن کا باعث بن رہے ہیں۔ چیف انفارمیشن آفیسراظہر نواز کو قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی کی واضح ہدایت کے باوجود اب تک معطل نہیں کیا گیا۔

مذکورہ افسر کو بیرون ملک دورے پر ہونے کی وجہ سے ادارہ ہر ماہ 10ہزار ڈالر باقاعدگی سے ادا کر رہا ہے۔ جبکہ چیف انفارمیشن آفیسر پہلے ہی 11لاکھ روپے ادارے سے تنخواہ وصول کر رہے ہیں۔

مزید پڑھیں : پی آئی اے : پانچ لاکھ سے زائد تنخواہ لینے والے افسران کی تفصیلات طلب

 پی آئی اے کے دیگر محکمہ کے افسران بھی بیرون ملک دوروں پر ہیں جن پر لاکھوں ڈالر کے اخراجات آرہے ہیں، مالی خسارے کے باعث پی آئی اے نے سول ایوی ایشن اتھارٹی ،مختلف ممالک کے ایئرپورٹ اور فیول کمپنیوں کوکروڑوں ڈالر کے واجبات ادا نہیں کئے ہیں۔

مزید پڑھیں: پی آئی اے میں کروڑوں پاونڈ کی کرپشن ،انتظامیہ کا تعاون سےگریز

واضح رہے کہ  قائمہ کمیٹی نے ایئرپورٹ پر سسٹم نہ چلنے مسافروں کو وقت پر بورڈنگ جاری نہ ہونے اور دفاتر میں انٹرنیٹ نہ چلنے پر بھی برہمی کا اظہار کیا تھا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top