پی آئی اے کا نشہ کرنے والے کپتانوں اور فضائی میزبانوں کیخلاف کریک ڈاؤن
The news is by your side.

Advertisement

پی آئی اے کا نشہ کرنے والے کپتانوں اور فضائی میزبانوں کیخلاف کریک ڈاؤن

کراچی : قومی ایئر لائن پی آئی اے نے نشہ کرنے والے کپتانوں اور فضائی میزبانوں کیخلاف اندرون و بیرون ملک پروازوں پر چھاپے مارنے کا فیصلہ کیا اور کہا ئی سافا پروگرام کے تحت الکوحل ٹیسٹ کیا جائے گا۔

تفصیلات کے مطابق قومی ایئر لائن پی آئی اے نے نشہ کرنے والے کپتانوں اور فضائی میزبانوں کیخلاف کریک ڈاؤن کا فیصلہ کرتے ہوئے کہا اندرون و بیرون ملک پروازوں پر چھاپے مار کر کپتان اور فضائی میزبانوں کے خون کے نمونے حاصل کیےجائیں گے۔

پی آئی اے انتطامیہ کا کہنا ہے کہ دبئی سافاپروگرام کےتحت الکوحل ٹیسٹ کیا جائے گا۔

یاد رہے گذشتہ روز پاکستان انٹرنیشل ایئر لائن (پی آئی اے) کی میڈیکل ٹیم نے طیارے کا اچانک دورہ کیا، اس دوران فضائی میزبان غلام محمد سرور چانڈیو کا میڈیکل ٹیسٹ کیا گیا جس میں ان کے خون میں الکوحل کی آمیزش سامنے آئی تھی۔

جس کے بعد فضائی میزبان کو فوری طور پر طیارے سے آف لوڈ کرکے معطل کردیا تھا۔

مزید پڑھیں : پی آئی اے کا فلائٹ اٹینڈنٹ نشے میں ہونے پر طیارے سے آف لوڈ

خیال رہے کہ چند روز قبل پی آئی اے نے نئی گائیڈ لائنز جاری کی تھی، جن میں فضائی میزبانوں سمیت دیگر عملے کو قد اور عمر کے لحاظ سے وزن کم کر کے عالمی معیار کے مطابق کرنے کی ہدایت کی ۔

پی آئی اے کی جانب سے جاری کردہ مراسلے میں کہا گیا تھا کہ 31 جنوری تک جن ملازمین کا وزن، عالمی معیار سے 30 پاؤنڈ زیادہ ہے، ان سب کو گراؤنڈ کرکے ایئر کریو اسپتال بھیجا جائے گا۔

مراسلے کے مطابق ایئر کریو کو اسپتال میں وزن کم کرنے کی مشق کروائی جائے گی جس کے لیے ہدف جون 2019 تک 30 پاؤنڈ وزن کم کرنا ہے۔ اس کے بعد بھی عملے میں سے کسی کا وزن کم نہیں ہوا تو تادیبی کارروائی عمل میں لائی جاسکتی ہے۔

مقررہ وقت کے بعد یکم جولائی 2019 کو عملے کے اراکین کا دوبارہ وزن کیا جائے گا اور صرف ان ملازمین کو فلائٹ پر جانے کی اجازت دی جائے گی جن کا وزن مقررہ حد کے عین مطابق ہوگا، ذرا سے بھی اضافی وزن والے عملے کو جہاز پر جانے کی اجازت نہیں ہوگی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں