پی آئی اے طیاروں سے منشیات کی برآمدگی ملک کی بدنامی ہے، رحمان ملک -
The news is by your side.

Advertisement

پی آئی اے طیاروں سے منشیات کی برآمدگی ملک کی بدنامی ہے، رحمان ملک

اسلام آباد : سینیٹ کی قائمہ کمیٹی داخلہ اور نارکوٹکس کے چئیرمین کمیٹی رحمان ملک نے کہا کہ پی آئی اے کے طیاروں سے منشیات کی برآمدگی سے عالمی سطح پر ملک کی بدنامی ہوئی ہے۔

یہ بات انہوں نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی، پارلیمنٹ لاجز میں ہونے والے اجلاس میں کمیٹی کو اے این ایف حکام نے بریفنگ بھی دی۔

چئیرمین کمیٹی رحمان ملک نے کہا کہ میری معلومات کے مطابق ائیرپورٹ پر ایک منشیات مافیا ہے جس میں سارے اداروں کے اہلکار شامل ہیں۔

منشیات کو جہاز کے پینل میں چھپایا جاتا ہے۔ سینیٹر چوہدری تنویر نے کہا کہ دو دن بعد اسی جہاز پر وزیراعظم نے بھی جاناتھا اگر یہ ہیروئن اس وقت نکل آتی ملک کی کتنی بےعزتی ہوتی، اجلاس میں کہا گیا کہ اے این ایف کی بروقت کارروائی قابل تعریف ہے۔

ایف آئی اے نے اب تک کیس کیوں نہیں رجسٹر کیا ہے؟ اس میں اب تک ایک بھی شخص گرفتار نہیں کیا گیا۔ حکام نے کمیٹی کو بتایا کہ طیاروں کی روزانہ کہ بنیاد پر اسکیننگ کر رہے ہیں۔

کمیٹی کو اے این ایف حکام نے بریفنگ میں بتایا کہ دو واقعے چھ دن کے وقفے سے ہیروئین ملنے کے ہوئے۔ دونوں ہیروئن ایک ہی قسم کی تھیں جو ہیتھرو ائر پورٹ اور بے نظیر بھٹو انٹرنیشنل ائر پورٹ سے ملی۔ پورے ملک سے جانے والی تمام پروازوں کو اب چیک کیا جا رہا ہے۔ ہم انکوائری کر رہے ہیں لیکن ابھی تک کسی کو گرفتار نہیں کیا گیا۔

چئیرمین کمیٹی رحمان ملک نے کہا کہ منشیات کی اسمگلنگ منظم کام ہے۔ کمیٹی وزیراعظم کا تحقیقاتی کمیٹی کی احکامات کی تعریف کرتی ہے۔

آئندہ میٹنگ میں پی آئی اے، سی آئی اے کے ذمہ داروں کو بلایا جائے۔ کیا کوئی ایسی ایجنسی ائیرپورٹ پر نہیں جو منشیات کو کنٹرول کرتی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں