The news is by your side.

Advertisement

کورونا کی چوتھی لہر ، پی آئی اے کو مالیاتی رپورٹ تیار کرنے میں مشکلات کا سامنا

اسلام آباد : سی ای اوپی آئی اے نے سیکیورٹی ایکسچینج کمیشن آف پاکستان سے دوسری سہ ماہی کی مالیاتی رپورٹ جمع کرانے کیلئے ایک ماہ کا وقت مانگ لیا۔

تفصیلات کے مطابق کورونا کی چوتھی لہر میں پی آئی اے کو مالیاتی رپورٹ تیار کرنے میں مشکلات کا سامنا ہے ، اس حوالے سے سی ای اوپی آئی اے نے سیکیورٹی ایکسچینج کمیشن آف پاکستان کو خط لکھا ، جس میں سہ ماہی کی مالیاتی رپورٹ جمع کرانے کے لیے ایک ماہ کا وقت مانگ لیا ہے۔

سی ای اوپی آئی اے نے ایس ای سی پی کےڈی جی انفورسمنٹ کو خط میں کہا کہ کورونا کی چوتھی لہرکےباعث دوسری سہ ماہی کی مالیاتی رپورٹ تیارنہیں، لاک ڈاؤن کےباعث دفتر میں کم عملہ بھی تاخیر کا باعث بنا۔

سی ای اوپی آئی اے کا کہنا تھا کہ 30اگست کومالیاتی رپورٹ جمع نہیں ہوسکےگی، دوسری سہ ماہی کی رپورٹ جمع کرنےکےلیے30ستمبرتک وقت دیاجائے۔

یاد رہے رواں سال جون میں اقتصادی سروے رپورٹ میں پی آئی اےکی کارکردگی سامنے آئی تھی ، سروے رپورٹ میں بتایا گیا تھا کہ قومی ایئرلائن کی کارکردگی کورونا کے باوجود مجموعی طورپربہتررہی ، سال 2020-21 میں پی آئی اےکی مجموعی آمدن 97ارب8کروڑرہی اور آپریٹنگ خسارہ 7 ارب روپے سے کم ہوکر صرف68 کروڑ رہ گیا۔

اقتصادی سروے میں کہا گیا تھا کہ کورونا کے باعث تمام ایئرلائنزکی طرح پی آئی اے کا بھی فضائی آپریشن متاثرہوا ، بیرون ممالک پھنسے پاکستانیوں کےلئےخصوصی پروازیں چلائی گئیں، 2020 میں جہازوں کی تعدادمیں کمی ہوئی لیکن روٹس میں اضافہ ہوا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں