پالپا اور پی آئی اے انتظامیہ کے درمیان تناؤ بڑھ گیا، 88 پروازیں منسوخ -
The news is by your side.

Advertisement

پالپا اور پی آئی اے انتظامیہ کے درمیان تناؤ بڑھ گیا، 88 پروازیں منسوخ

کراچی : پالپا اور پی آئی اے انتظامیہ کے درمیان تناؤ بڑھ گیا، پی آئی اے کے پائلٹس اور انتظامیہ کے درمیان تنازعے کا آج چھٹا روز ہے، چھ روز سے جاری لڑائی کے دوران اٹھاسی سے زائد پروازیں منسوخ ہوئے، جس سے پچاس کروڑ روپے سے زائد کا نقصان ہوا جبکہ زیادہ تر مسافروں نے اپنے ٹکٹ ریفنڈ کروا کر نجی ایئرلائن کے ٹکٹ خریدرہے ہیں.

فریقین کی گزشتہ روز کی بیٹھک بھی نتیجہ خیزثابت نہ ہوسکی، پالپا صدرعامر ہاشمی نے بحران کا ذمہ دار پی آئی اے انتطامیہ کو قرار دے دیا، پی آئی اے اور پالپا تنازع نے مسافروں کو دربدر کی ٹھوکریں کھانے پر مجبور کردیا ہے.

سول ایویشن اتھارٹی نے پالپا کے بیمار پائلٹس کی میڈیکل رپورٹ کی جانچ پڑتال اور طبی معائنے کے لیے میڈیکل بورڈ تشکیل دے دیا ہے.

گزشتہ روز حکومت اورپائلٹس کی تنظیم پالپا کےمذاکرات ناکام ہوگئے تھے، وزیرِاعظم کے مشیر نے پائلٹس کے مطالبات ماننےسےانکارکردیا تھا.

سول ایوی ایشن اتھارٹی کے ترجمان شیرعلی خان نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پالپا کے تین مطالبات منظور نہیں کئے جاسکتے ہیں پالپا کے نمائندوں نے وزیر اعظم کے معاون خصوصی شجاعت عظیم سے مذاکرات کیے.

شجاعت عظیم کا کہنا تھا کہ مطالبات سمجھ سے بالاتر ہیں، پائلٹس کے خلاف کارروائی کی جاسکتی ہے، انہوں نے اپنی سمری وزیراعظم کو بھیج دی.

دوسری جانب صدر پالپا کا کہنا ہے کہ وہ چاہتے ہیں سول ایوی ایشن کا تجربہ رکھنے والے لوگوں کو سامنے لایا جائے، ذرائع کا کہنا ہے پالپا نے پائلٹس کی تنخواہوں میں سو فیصد اضافے کا بھی مطالبہ کررکھا ہے۔

پالپا کے مطالبات اور پی آئی اے کے جوابات

پالپا کا پہلا مطالبہ : ڈائریکٹر فلائٹ آپریشن فوری تبدیل کیا جائے .
پی آئی اے کا جواب: کوئی ڈیکٹیشن قبول نہیں.

دوسرا مطالبہ: پائلٹس کے خلاف تمام شوز کازاور لیگل نوٹس واپس لئے جائیں ، تحقیقات بندکی جائیں
پی آئی اے کا جواب : پالپا کے مطالبات منیجمنٹ کو چیلنج کرنے مترادف ہیں.

تیسرامطالبہ: معطل پائلٹس بحال کئے جائیں اور پائلٹس کی سنیارٹی مقرر کی جائیں.
پی آئی اے کا جواب: بلیک میل ہونے کو ہم تیار نہیں.

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں