The news is by your side.

Advertisement

پی آئی اے نے عدالتی احکامات ہوا میں اڑا دیئے، طیارے سے مارخور کا نشان نہیں ہٹایا

کراچی : پی آئی اے میں ن لیگ کی باقیات سپریم کورٹ کے احکامات کی سنگین خلاف ورزیاں کر رہی ہے، پی آئی اے کے طیارے پر سے مارخور کا نشان ہٹانے کے عدالتی احکامات پرتاحال عمل درآمد نہ ہوسکا۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ کے چیف جسٹس ثاقب نثار کے واضح احکامات کے باوجود مارخور کی تصویر کا حامل طیارہ پی آئی اے کی پروازوں کیلئے بدستور استعمال کیا جارہا ہے۔

سپریم کورٹ نے پی آئی اے کے جہاز پر سے مارخور کے نشان نہ ہٹانے پر22 جولائی کو توہین عدالت کا نوٹس جاری کیا تھا، سپریم کورٹ کے ازخود نوٹس میں پی آئی اے کے سی ای او کو ہدایت کی گئی تھی کہ طیارے سے مارخور کا نشان فوری طور پر ہٹایا جائے۔

پی آئی اے کے مارخور کی تصویر کے حامل طیارے نے آج کراچی سے ڈھاکہ اور ڈھاکہ سے کراچی پرواز بھی کی، طیارے پر کلر اسکیم اور دُم پر قومی پرچم ہٹا کر مارخور کی تصویر پینٹ کرنے پر پی آئی اے کو69لاکھ روپے سے زائد کے اخراجات آئے تھے، جس کا عدالت نے ازخود نوٹس لیا تھا۔

اس کے علاوہ اعلیٰ عدلیہ کے احکامات کی کھلم کھلا خلاف ورزی کرتے ہوئے پی آئی اے کی آفس اسٹیشنری پر بھی مارخور کا نشان استعمال کیا جا رہا ہے۔

واضح رہے کہ سپریم کورٹ نے گزشتہ ماہ قومی ایئرلائن پی آئی اے کے جہازوں پرقومی پرچم کی جگہ مارخورکی تصویرلگانے پر پابندی عائد کی تھی۔

مزید پڑھیں: پی آئی اے کے جہازوں پرقومی پرچم کی جگہ مارخورکی تصویرلگانے پر پابندی عائد

چیف جسٹس نے حکم دیا کہ آئندہ کسی جہاز سے قومی پرچم نہیں ہٹایا جائے گا، کسی جہاز سے قومی پرچم ہٹایا گیا تو اسے حکم عدولی سمجھا جائے گا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں