The news is by your side.

Advertisement

پی آئی اے جہاز کی دم پر قومی پرچم ہٹا کر مارخور کا اسٹیکر، پچاس ہزار ڈالر کے اخراجات

کراچی : مسلم لیگ ن کی حکومت کا جاتے جاتے ایک اور کارنامہ سامنے آگیا، پی آئی اے کے طیارے کی دُم سے قومی پرچم ہٹا کر مارخور کا ایک اسٹیکر لگا دیا گیا، کلر اسکیم پر فی جہاز پچاس ہزار ڈالر کے اخراجات ہوں گے۔

تفصیلات کے مطابق اربوں روپے کے مالی خسارے اور مختلف اداروں کے واجبات سے دوچار قومی ایئرلائن نے جہازوں کی دم پر سے قومی پرچم کا نشان ہٹا کر پچاس ہزار ڈالر مالیت کا مارخور کا اسٹیکر پیسٹ کردیا۔

صرف ایک جہاز کی دُم پر مارخور پینٹ کرنے سے پی آئی اے کے ایک طیارے پر پچاس ہزار ڈالر کے اخراجات آئے ہیں جبکہ ڈیزائنر کو ڈیزائن بنانے کی مد میں پی آئی اے نے تین کروڑ پچاس لاکھ روپے بھی ادا کئے ہیں۔

بیرون ملک سے آئی ہوئی ٹیم پی آئی اے کے طیاروں کی دم پر مارخور کا اسٹیکر پیسٹ کر رہی ہے، اس غیر ملکی ٹیم کو بھی پی آئی اے لاکھوں روپے کی ادائیگیاں کرنا پڑیں گی۔

صرف چار طیاروں کی دُم پر مارخور اور طیاروں پر کلر اسکیم تبدیل کرنے پر  ادارے کو مجموعی طور پر دو لاکھ ڈالر کے اخراجات برداشت کرنا پڑیں گے، طیارے پر نئی کلر اسکیم سے جہاز پر اردو میں پی آئی اے کا اسٹیکر پیسٹ کیا گیا ہے لیکن اس میں پ کے نقطے غائب ہیں۔

انجن کے پاس جگہ نہ ہونے کی وجہ سے پ کے نقطے نہیں لگائے جاسکے۔ اس کے علاوہ قومی پرچم کو جہاز کی دم سے ہٹا کر طیارے کے اگلے حصے پر پرچم کو چھوٹا کرکے پیسٹ کردیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ قومی ادارہ پی آئی اے تین سو ارب روپے سے زائد خسارے سے دوچار ہے اور اس پر مختلف اداروں کے واجبات بھی ہیں،  پی آئی اے کے طیاروں پر قومی پرچم دنیا کے کسی حصے میں جاتا تھا تو پاکستانیوں کیلئے فخر کی علامت ہوتا تھا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔ 

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں