The news is by your side.

Advertisement

انجن پی آئی اے کی ذمہ داری ہے ہماری نہیں،سول ایوی ایشن

اسلام آباد: طیارہ حادثے سے متعلق سول ایوی ایشن کی جانب سے پی آئی اے کو اہم خط لکھ دیا گیا جس میں کہا گیا کہ انجن کی ذمے داری پی آئی اے کی ہے سول ایوی ایشن کی نہیں۔

تفصیلات کے مطابق سول ایوی ایشن اتھارٹی (سی اے اے) کی جانب سے پاکستان انٹر نیشنل ایئر لائن (پی آئی اے) کو خط لکھ دیا گیا ہے جس میں پی آئی اے طیاروں کے آڈٹ، مرمت، معیار اور ائر وردینس کے معاملات منظر عام پر آگئے ہیں۔

خط میں کہا گیا ہے کہ اے ٹی آر کی بحفاظت اڑان کے لیے نہ صرف ریگیولیٹری اتھارٹی بلکہ طیارہ ساز کمپنی کی ہدایت پر سختی سے عمل ہونا چاہیے، انجن کی صحت کا جائزہ، رجحان اور مانیٹرنگ پی آئی اے کی اولین ذمہ داری ہے۔

pia-post-01

خط کے مندرجات کے مطابق تمام اے ٹی آر انجن کی جانچ کے بعد ظاہر ہوا ہے کہ پروپیلر بلیڈ، بیرنگز اور تیل کی ترسیل خراب ہونے کی وجہ سے انجن بند ہونے کے بہت واقعات ہوئے ہیں۔

خط کے مطابق اے ٹی آر انجن کے اندرونی معاملات سی اے اے کے دائرہ اختیار میں نہیں، اے ٹی آر طیاروں کے انجنز کی کلیئرنس،پی آئی اے اور طیارہ ساز کمپنیوں کے ماہروں کی کلیئرنس سے مشروط ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں