The news is by your side.

Advertisement

پی آئی سی واقعہ: پنجاب فرانزک سائنس ایجنسی نے 40 وکلا کی نشاندہی کر دی

لاہور: پنجاب فرانزک سائنس ایجنسی نے پنجاب انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی (پی آئی سی) واقعے میں ملوث 40 وکلا کی نشاندہی کر دی۔

تفصیلات کے مطابق پنجاب فرانزک سائنس ایجنسی نے پنجاب انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی (پی آئی سی) واقعے میں ملوث 40 وکلا کی نشاندہی کر دی۔

پی آئی سی واقعے سے متعلق رپورٹ سیکریٹری داخلہ کو پیش کر دی گئی جس میں بتایا گیا کہ پولیس نے7 وکلا کو پکڑا جو واقعے میں ملوث تھے، پولیس متعدد ملوث وکلا کو گرفتار نہ کرسکی۔

ذرائع کے مطابق ملوث33 افراد کی گرفتاری کے لیے نادرا سے مدد مانگ لی گئی۔ سیکرٹری داخلہ نے ذمہ داروں کو فوری گرفتار نہ کرنے پر پولیس پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اسپتال میں توڑ پھوڑ کرنے والے وکلا کو فوری گرفتار کیا جائے۔

یاد رہے کہ رواں ماہ 11 دسمبر کو لاہور میں پنجاب انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی ( پی آئی سی) میں وکلا نے ہنگامہ آرائی کرکے اسپتال کے اندر توڑ پھوڑ کی تھی جس کے باعث طبی امداد نہ ملنے سے تین مریض جاں بحق ہوگئے تھے جبکہ وزیراعظم اور وزیراعلیٰ پنجاب نے واقعے کا نوٹس لیا تھا۔

بعدازاں لاہور میں انسداد دہشت گردی کی عدالت نے 46 وکلا کو جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا تھا جبکہ پولیس کی جانب سے پی آئی سی حملے کے الزامات کی تحقیقات کے لیے ان کے جسمانی ریمانڈ سے متعلق پولیس کی درخواست مسترد کر دی تھی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں