The news is by your side.

Advertisement

طیارہ حادثہ، تحقیقاتی ٹیم کے سربراہ اہم شواہد لے کر پاکستان روانہ

کراچی: پی آئی اے طیارہ حادثہ سے متعلق پاکستانی تحقیقاتی ٹیم کے سربراہ اہم شواہد لے کر فرنکفرٹ سے وطن واپس روانہ ہوگئے۔

ٹیم کے سربراہ پی آئی اے کی خصوصی پرواز پی کے 8734 کے ذریعےآج رات 11بجے اسلام آباد پہنچیں گے۔

فرانسیسی ماہرین نے حادثے میں تباہ ہونے والے پی آئی اے کے طیارے کے بلیک بکس اور کاکپٹ وائس ریکارڈر کا ریکارڈ ڈی کوڈ کرنے کے بعد ایئر ایکسیڈنٹ اینڈ انویسٹی گیشن بورڈ کے سربراہ عثمان غنی کے حوالے کیا تھا۔

ایئر کموڈور عثمان غنی اہم شواہد سے متعلق اپنی رپورٹ آئندہ چند روز میں ایوی ایشن ڈویژن میں جمع کرائیں گے۔

یہ بھی پڑھیں: پی آئی اے طیارہ حادثہ، اب تک کی سب سے بڑی پیشرفت

ذرائع کا کہنا ہے کہ کاکپٹ وائس ریکارڈر سے تحقیقات کے دوران اہم معلومات حاصل ہوئی ہیں، تحقیقات میں اہم شواہد اس بات کی نشاندہی کریں گے کہ کیا انسانی غلطی تھی یا کوئی اور معاملہ ہے۔

پاکستان واپس پہنچنے کے بعد ایئرکموڈور 22 جون کو وزیر اعظم عمران خان سے ملاقات کریں گے جس میں وہ طیارہ حادثے کے اہم شواہد سے متعلق ابتدائی رپورٹ پیش کریں گے۔

طیارہ سازایئر بس کمپنی نے ابتدائی تحقیقات کے بعد طیارے کو درست قرار دیتے ہوئے اس میں کسی قسم نقص کے نہ ہونے کا عندیہ دیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں