The news is by your side.

Advertisement

پلاسٹک سے بھری قوی الجثہ وہیل نہر میں آگئی

بیلجیئم کے شہر بروجژ کی نہر سے پلاسٹک سے بنی قوی الجثہ وہیل نمودار ہوگئی۔

یہ وہیل دراصل پلاسٹک سے بنائی گئی جس کا مقصد لوگوں کی توجہ پلاسٹک کی آلودگی کی طرف مبذول کروانا ہے۔

بروجژ کی نہر میں بنائی جانے والی یہ وہیل 38 فٹ طویل ہے اور اسے 5 ٹن پلاسٹک کے کچرے سے بنایا گیا ہے۔

اسے بنانے والوں کا کہنا ہے کہ یہ پلاسٹک انہوں نے سمندروں اور دریاؤں سے جمع کیا ہے۔

نیدر لینڈز کے ماحولیاتی ادارے گرین پیس کے مطابق دنیا بھر میں 26 کروڑ ٹن پلاسٹک پیدا کیا جاتا ہے جس میں سے 10 فیصد ہمارے سمندروں میں چلا جاتا ہے۔

اقوام متحدہ کے مطابق سنہ 2050 تک ہمارے سمندروں میں آبی حیات سے زیادہ پلاسٹک موجود ہوگی۔

پلاسٹک سمندروں میں موجود آبی حیات کی بقا کے لیے بھی سخت خطرات کا باعث بن رہی ہے۔

زیادہ تر جاندار پلاسٹک کو غذائی اشیا سمجھ کر نگل جاتے ہیں جو ان کے جسم میں ہی رہ جاتا ہے نتیجتاً ان کا جسم پلاسٹک سے بھرنے لگتا ہے اور یہ جاندار بھوک کی حالت میں مر جاتے ہیں۔

مزید پڑھیں: پلاسٹک نے بے زبان وہیل کی جان لے لی

اسی طرح یہ جاندار پلاسٹک کے ٹکڑوں میں پھنس جاتے ہیں جس سے ان کے جسم کی ساخت بگڑ جاتی ہے۔ پلاسٹک میں پھنس جانے والے جاندار بعض اوقات ہلاک بھی ہوجاتے ہیں۔

پلاسٹک کی تباہ کاری کے بارے میں مزید مضامین پڑھیں


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں