The news is by your side.

Advertisement

مشرف آئین شکنی کا فیصلہ سنانے کے لئے سپریم کورٹ میں درخواست دائر

اسلام آباد : سابق صدر پرویز مشرف آئین شکنی کیس کا فیصلہ سنانے کیلئے سپریم کورٹ میں درخواست دائر کردی گئی ، وفاقی حکومت کیس مکمل ہونے میں روڑے اٹکا رہی ہے،عدالت انصاف کومدنظررکھ کرحکومت، خصوصی عدالت کوہدایات جاری کرے۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں سابق صدر پرویز مشرف آئین شکنی کیس کا فیصلہ سنانے سے متعلق درخواست دائر کردی گئی ، درخواست لاہور ہائی کورٹ بار کی جانب سے دائر کی گئی ہے۔

درخواست میں مؤقف اختیار کیا گیا ہے کہ سپریم کورٹ نے یکم اپریل کو ٹرائل مکمل کرنے کی واضح ہدایات دیں، سپریم کورٹ نے کہا تھا مشرف کی عدم پیشی پرحق دفاع ختم ہوجائے گا وفاقی حکومت کیس مکمل ہونے میں روڑے اٹکا رہی ہے۔

دائر درخواست میں کہا گیا خصوصی عدالت بھی ٹرائل مکمل نہ کرکےاحکامات کی خلاف ورزی کر رہی ہے لہذا استدعا ہے انصاف کومدنظررکھ کرحکومت اورخصوصی عدالت کوہدایات جاری کی جائے اور سپریم کورٹ اپنے یکم اپریل 2019 کے حکم پر عملدرآمد کرائے۔

مزید پڑھیں : آئین شکنی کیس، فیصلہ رکوانے کیلئے حکومتی درخواست پر سیکرٹری قانون کل ذاتی طور پرطلب

یاد رہے 19 نومبر کو خصوصی عدالت نے سابق صدر پرویز مشرف کے خلاف آئین شکنی کیس کا فیصلہ محفوظ کیا تھا، جو 28 نومبر کو سنایا جائے گا، فیصلہ یک طرفہ سماعت کے نتیجے میں سنایا جائے گا۔

بعد ازاں حکومت کی جانب سے آئین شکنی کیس کا فیصلہ روکنے کے لیے درخواست دائر کی گئی تھی ، جس میں وزارت داخلہ کی جانب سے کہا گیا تھا کہ پرویز مشرف کو صفائی کا موقع ملنے اور نئی پراسکیوشن ٹیم تعینات کرنے تک خصوصی عدالت کو فیصلے سے روکا جائے اور فیصلہ محفوظ کرنے کا حکم نامہ بھی معطل کیا جائے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں