The news is by your side.

Advertisement

پی آئی اے کے انجینئرز کی صلاحیتیں بروئے کار لائی جائیں، سردارمہتاب خان

کراچی : وزیر اعظم پاکستان کے مشیر برائے ایوی ایشن سردار مہتاب احمد خان نے کہا ہے کہ پی آئی اے کا شعبہ انجینئرنگ نہایت اہمیت کا حامل ہے اوراس کے موجودہ وسائل کو استعمال کرتے ہوئے کم سے کم وقت میں اس سے بہتر نتائج کے حصول کیلئے تمام تر کوشش بروئے کار لا ئی جائیں ۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے انجینئرنگ اور لائن مینٹینس ڈیپارٹمنٹ کے دورہ کے موقع پر کیا۔ اس موقع پر پی آئی اے کے قائم مقام چیئرمین محمد عرفان الہٰی ان کے ساتھ تھے۔

پی آئی اے کے چیف ٹیکنیکل آفیسر عامر علی نے انہیں شعبہ انجینئرنگ میں کام کی نوعیت اور درپیش مشکلات کے بارے میں تفصیل سے آگاہ کیا۔

اس موقع پر سردارمہتاب احمد خان نے کہا کہ پی آئی اے کے شعبہ انجینئرنگ کی استعداد کار میں مزید اضافہ کیا جائے تا کہ یہاں سے نہ صرف پی آئی اے کے اپنے طیاروں کو مکمل تکنیکی سہولیات کی فراہمی ہو بلکہ دوسری ایئر لائنوں کو بھی فنی سہولیات فراہم کر کے ریونیو حاصل کیا جائے۔

انہوں نے کہا کہ بین الاقوامی قوانین کو مدنظر رکھتے ہوئے مینٹینس کے معیارکوانجن بنانے والی کمپنیوں کی ہدایات اور یورپی ایوی ایشن سیفٹی ایجنسی اورغیرملکی طیاروں کے حفاظتی معیارکا معائنہ کرنے والی ایجنسی کے مطابق طیاروں کی ضروری دیکھ بھال کی جائے۔

انہوں نے مزید کہا کہ محفوظ ہوائی سفر میں شعبہ انجینئرنگ کا کلیدی کردار ہے اوراس سلسلے میں کوئی کوتاہی برداشت نہیں کی جائے گی۔

سردار مہتاب احمد خان نے اس بات پر زوردیا کہ پی آئی اے اپنے شعبہ انجینئرنگ کی افرادی قوت کو بہترٹریننگ فراہم کر کے اپنی صلاحیتوں میں مزید بہتری لائے۔

انہوں نے ہدایت کی کہ پی آئی اے یورپین ایوی ایشن سیفٹی ایجنسی کا سرٹیفکیٹ ترجیحی بنیادوں پر حاصل کرے ۔اسی طرح غیر ملکی ایئر پورٹس پر پی آئی اے کے طیاروں کے سیفٹی ایجنسی کی جانب سے معائنوں میں کمی لانے کیلئے ہر ممکن کوششیں کی جائیں۔

انہوں نے ہدایات جاری کیں کہ ہینگر اور اس کے ملحقہ علاقوں سے فالتو اور غیر ضروری سامان ہٹایا جائے کیونکہ ان کی وجہ سے انتہائی قیمتی جگہ کا غیر ضروری استعمال ہو رہا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں