The news is by your side.

Advertisement

کشمیری مظلوم ہیں، اپنا مقدمہ خود لڑنا ہوگا: وزیراعظم آزاد کشمیر

مظفرآباد: وزیر اعظم آزاد کشمیر فاروق حیدر کا کہنا ہے کہ جب تک کشمیریوں کو کشمیر کا مقدمہ خود نہیں لڑنے دیا جاتا تب تک مسلہ حل نہیں ہو گا۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے گذشتہ روز اسلام آباد میں انسانی حقوق کے عالمی دن کے موقع پر مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی پامالیوں کے موضوع پر منعقدہ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

فاروق حیدر کا کہنا تھا کہ پاکستان اپنا کردار ادا کرتا رہے مگر کشمیری مظلوم ہیں اسلئے خود مقدمہ لڑیں، بھارت مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی کھلی خلاف ورزی کر رہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ بھارتی مظالم دیکھ کر دل خون کے آنسو روتا ہے، سفارتی ذرائع اور عالمی فورمز پر احتجاج کے باوجود دنیا ہمارا موقف تسلیم کرنے کو تیار نہیں، سوچنا ہوگا ایسا کیوں ہے۔

وزیراعظم آزاد کشمیر کا کہنا تھا کہ کشمیریوں نے اپنی قربانیوں سے تحریک آ زادی زندہ رکھا ہے، اسلامی ممالک میں پاکستان کشمیر کا سب سے بڑا حمایتی ہے، جو ہر محاز پر کشمیر یوں کے شانہ بشانہ کھڑا رہا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ کشمیر کے معاملے پر تمام سیاسی جماعتوں کو ایک ساتھ بیٹھ کر جامع حکمت عملی مرتب کرنا ہو گی، کشمیریوں کو عالمی سطح پر اپنے حق خودارادیت سے متعلق بات کرنے کا موقع نہ ملنے تک مسئلہ حل نہیں ہو گا۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ یمن کا ایشو ہو فلسطین کا ایشو ہو عالمی میڈیا اسے اٹھاتا ہے لیکن کشمیر کے معاملے پر سب کنی کترا جاتے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں