The news is by your side.

Advertisement

آئندہ پاکستان کے اندر کسی اور کی جنگ نہیں لڑیں گے، وزیرِ اعظم عمران خان

میرانشاہ: وزیرِ اعظم عمران خان نے آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کے ہم راہ شمالی وزیرستان کے دورے کے موقع پر کہا کہ آئندہ پاکستان کے اندر کسی اور کی جنگ نہیں لڑیں گے۔

تفصیلات کے مطابق ڈی جی آئی ایس پی آر کی جانب سے جاری اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ وزیرِ اعظم عمران خان نے میرانشاہ دورے کے موقع پر کہا کہ ہم افغانستان سمیت سرحد پار امن چاہتے ہیں۔

وزیرِ اعظم نے فاٹا میں قائم اضلاع کے لیے ترقیاتی پیکج، یونی ورسٹی اور آرمی کیڈٹ کالج بنانے کے اعلانات بھی کیے۔

وزیرِ اعظم نے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف جو قربانیاں پاکستان نے دیں دنیا میں کسی نے نہیں دیں، پاک فوج اور عوام کی قربانی کی دنیا میں نظیر نہیں ملتی۔

انھوں نے کہا کہ پاکستانی عوام پر جنگ مسلط کی گئی، دہشت گردی کے خلاف جنگ کی بھاری قیمت چکائی ہے، دہشت گردی کے خلاف جنگ میں ہم نے خون پسینہ بہایا، معیشت کو نقصان پہنچا، آئندہ پاکستان کے اندر کسی اور کی جنگ نہیں لڑیں گے۔

وزیرِ اعظم نے دہشت گردی اور مشکل حالات کا سامنا کرنے پر فاٹا، خیبر پختونخوا کے عوام کی تعریف کی، کہا فاٹا کےعوام نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں قربانیاں دیں، قبائلی عوام جنگ کے دوران مشکل حالات سے گزرےہیں۔

وزیرِ اعظم نے دہشت گردوں کے خلاف کام یاب آپریشن پر پاک فوج کی بھی تعریف کی، کہا پاک فوج نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں کام یابیاں حاصل کیں، اس جنگ میں کسی اور ملک نے اتنا نہیں کیا جتنا پاکستان نے کیا۔


یہ بھی پڑھیں:  وزیراعظم عمران خان اورآرمی چیف میرانشاہ پہنچ گئے


ان کا کہنا تھا کہ افغانستان سمیت ہم سایہ ممالک میں امن کے خواہاں ہیں، افغانستان میں امن کا قیام پاکستان کے مفاد میں ہے، افغانستان میں امن کے لیے اسٹیک ہولڈرز کے ساتھ مل کر کردار ادا کریں گے۔

وزیرِ اعظم عمران خان نے مزید کہا کہ شہیدوں نے وطن کی حفاظت کے لیے جانوں کا نذرانہ پیش کیا۔

وزیرِ اعظم نے اس موقع پر فاٹا میں قائم اضلاع کے لیے ترقیاتی پیکج، یونی ورسٹی اور آرمی کیڈٹ کالج بنانے، قانون نافذ کرنے والے اداروں کی استعدادِ کار بڑھانے کے اعلانات کیے۔ انھوں نے کہا کہ نیا پاکستان بن رہا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں