The news is by your side.

Advertisement

منی لانڈرنگ کیخلاف ملکی تاریخ کا سب سے بڑا آپریشن کرنے جارہے ہیں، وزیراعظم

سندھ میں تو کل سے چیخوں کی آوازیں آنا شروع ہوگئی ہیں، سُفرا کانفرنس سے خطاب اور صحافیوں سے گفتگو

اسلام آباد : وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ منی لانڈرنگ کے خلاف ملکی تاریخ کا سب سے بڑا آپریشن کرنے جارہے ہیں، منی لانڈرنگ کرنے والوں کی چیخیں سن رہا ہوں۔

یہ بات انہوں نے اسلام آباد میں سُفرا کانفرنس سے خطاب اور صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہی، عمران خان کا کانفرنس سے خطاب میں کہنا تھا کہ ہمیں دوسروں پر انحصار کی پالیسی ترک کرنے کیلئے مائنڈ سیٹ تبدیل کرنا ہوگا۔

عمران خان نے کہا کہ کانفرنس کے انعقاد پر وزارت خارجہ مبارکباد کی مستحق ہے، قومی غیرت کی بات کی جائے تو ہمارا مذاق اڑایا جاتا ہے، قوم تب اٹھتی ہےجب وہ یقین کرناشروع کرتی ہے، جہاں آج پاکستان ہے، سمجھتا ہوں یہ ہمارے لیےبہت بڑا موقع ہے، ایک چیز واضح ہوجانی چاہیے کہ پاکستان ایسے آگےنہیں چل سکتا۔

وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ ہم نے اپنے ملک کو بہت نقصان پہنچایا ہے، گھر قرضوں پر زیادہ دیرنہیں چل سکتا، اس طرح ملک بھی قرضوں پر زیادہ دیر نہیں چلتا، دوسروں پر انحصارکی پالیسی ترک کرنے کیلئے مائنڈ سیٹ تبدیل کرنا ہوگا، ہمیں دوسروں پر انحصار کی پالیسی ترک کرنا ہوگی، قوم تب اٹھتی ہےجب وہ یقین کرناشروع کرتی ہے۔

عمران خان نے کہا کہ سب سے زیادہ ہمارے ملک کو نقصان غیرت ختم ہونے کی وجہ سے پہنچا، ہم نے اپنے خرچے کم نہیں کیے ہم ایک قوم نہیں بن سکے، جتنے بھی مسائل دیکھ لیں وہ اسی مائنڈ سیٹ سے آئےہیں، فراڈ قسم کے مائنڈ سیٹ نے پاکستان کو بہت نقصان پہنچایا ہے۔

ماضی میں ملکی آمدن بڑھانے کے بجائے شارٹ کٹ لیتے رہے، قومی وقار کی بات کرتے ہیں تو مذاق اڑایا جاتاہے، ملک کی بہتری کیلئے دفترخارجہ اپنا مائنڈ سیٹ تبدیل کرے، دوسروں پر انحصار کی پالیسی کی وجہ سے خارجہ پالیسی کوبھی نقصان پہنچا، ملک کا امیج خراب کرنے میں ہم سب کا بہت بڑا ہاتھ ہے، ہم نے ماضی میں مختصر مدت کے مفاد کیلئے غلط فیصلے کئے بیرون ملک قرضوں سے اشرافیہ مستفید ہوتی رہی، ہماری اپنی اشرافیہ نےخود ملک کو بدنام کیا

اوورسیز پاکستانی اثاثہ ہیں، ملک ان ہی کی کمائی سے چل رہا ہے، وزیراعظم

وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ اوورسیز پاکستانی ملک کے لئے سب سے بڑا اثاثہ ہیں، میں نے شوکت خانم اسپتال کیلئے بھی اوورسیز پاکستانیوں سے ہی رابطہ کیا تھا، مجھے پتہ ہے اوورسیز پاکستانی بہت کو آپریٹو ہیں، ہمیں ان کو یقین دلانا ہوگا ان کاپیسہ ٹھیک جگہ پر لگ رہا ہے، بیرون ممالک مقیم پاکستانیوں سے روابط رکھنا بہت ضروری ہیں۔

وزیراعظم عمران خان  نے کہا کہ یہ وہ لوگ ہیں جو اپنے بیوی بچے،ماں باپ چھوڑ کر باہر ملکوں میں کام کرتے ہیں، یہ ملک ان پاکستانیوں کے خون پسینے سے ہی چل رہا ہے، بیرون ملک پاکستانی کمیونٹیز سے مل کر ورکنگ ریلیشن گروپ بنائے جائیں، جو ہمیں چیلنجزہیں ہم انہیں بہتر معیشت کے بغیر دور نہیں کرسکتے۔

وزیراعظم کا مزید کہنا تھا کہ ملک میں سالانہ دس ارب ڈالر کی منی لانڈرنگ ہورہی ہے اس کی روک تھام کیلئے سخت اقدامات کرنا ہوں گے، بیرون ملک کمانے والے پاکستانیوں کیلئےدل میں رحم پیدا کریں، منی لانڈرنگ کے خاتمے کیلئےبھی آپ کی بڑی مدد چاہئے۔

جب تک لوگ سرمایہ کاری نہیں کرینگےتوملک میں ترقی نہیں ہوگی، پوری کوشش کریں گےکہ تاجر برادری کے ساتھ کھڑے ہوں، ملائیشیا میں ہماری بہترین سرمایہ کاروں سے ملاقات ہوئی، منی لانڈرنگ کے معاملے میں کل سے میری تعریف ہورہی ہے، فخر ہے ہمارا دفترخارجہ معیاری اورتجربہ کار سفارت کار ہیں، سفارت کاروں کی کارکردگی بہتر ہے اس میں مزید بہتری لانا ہوگی۔

منی لانڈرنگ کرنے والوں کی چیخیں سن رہا ہوں، عمران خان

وزیراعظم عمران خان نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ منی لانڈرنگ کےخلاف ملکی تاریخ کاسب سے بڑا آپریشن کرنے جارہے ہیں، منی لانڈرنگ کرنے والوں کی چیخیں سن رہا ہوں، منی لانڈرنگ کسی صورت برداشت نہیں کی جائے گی، منی لانڈرنگ کرنے والوں سے رعایت نہیں برتی جائے گی، ڈالر کی اسمگلنگ کرنے والے اپنے دن گننا شروع کردیں، سندھ میں تو کل سے چیخوں کی آوازیں آنا شروع ہوگئی ہیں۔

ایک سوال کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ آئی ایم ایف کے پاس جانے میں کوئی جلدی نہیں ہے، ہمیں ڈالر کیلئے آئی ایم ایف پروگرام کی ضرورت نہیں، آئی ایم ایف سے ڈکٹیشن نہیں لیتے، معیشت میں اصلاحات ملک کیلئےکی ہیں، اگلا منی بجٹ عوام دشمن نہیں ہوگا، بجٹ میں کاروبارکا فروغ چاہتے ہیں، ایف اے ٹی ایف کے تمام اقدامات پاکستان کےحق میں ہیں، وہ منی لانڈرنگ روکنے کا کہتا ہے، مسلح گروپوں کا خاتمہ نیشنل ایکشن ٹاسک فورس کا بھی مطالبہ ہے۔

قوم کو واضح کردوں کہ اب ملک میں اب کسی قسم کا کوئی بحران نہیں ہے البتہ چیلنجز کا سامنا ضرور ہے، سرمایہ کار اطمینان رکھیں ملک میں کوئی غیریقینی صورتحال نہیں ہے، ملک کی تاریخ کاسب سے بڑا اور مؤثر غربت مٹاؤ پروگرام لے کر آرہاہوں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں