The news is by your side.

Advertisement

وزیرِ اعظم کی زیرِ صدارت اجلاس، تاریخی سرکاری عمارتوں کے استعمال کا فیصلہ

اسلام آباد: وزیرِ اعظم عمران خان کی زیرِ صدارت خصوصی اجلاس میں تاریخی سرکاری عمارتوں پر بریفنگ دی گئی، گورنر ہاؤسز سمیت ملک بھر میں تاریخی، سرکاری عمارتوں کے استعمال کا فیصلہ کیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق ملک کی تاریخی، سرکاری عمارتوں کو استعمال میں لانے کے لیے اجلاس بلایا گیا، جس میں وزیرِ قومی ورثہ شفقت محمود، چیئرمین ایچ ای سی، وزارتِ خارجہ، ہاؤسنگ اور وزارتِ تعلیم کے سیکریٹریز نے شرکت کی۔

لاہور اور کراچی کے اسٹیٹ گیسٹ ہاؤسز میں فائیو اسٹار ہوٹل بنانے، پنجاب ہاؤس پنڈی پوائنٹ مری کو یونی ورسٹی بنانے کی تجاویز پر غور

اجلاس میں وزیرِ اعظم کو سرکاری عمارتوں کی دیکھ بھال اور مرمت پر اخراجات کی تفصیل پیش کی گئی، وزیرِ اعظم کو بریفنگ دی گئی کہ چنبہ ہاؤس لاہور پر سالانہ ایک کروڑ کا خسارہ ہے، قصرِ ناز کراچی سالانہ 2 کروڑ کے نقصان میں ہے، گورنمنٹ ہاؤس مری کی تزئین و آرائش پر سابقہ حکومت نے 60 کروڑ خرچ کیے۔

وزیرِ اعظم نے گورنمنٹ ہاؤس کشمیر پوائنٹ مری کو جدید ہوٹل بنانے کی ہدایت کی، انھوں نے چیف سیکریٹری پنجاب سے کہا کہ اس عمل کو جلد مکمل کیا جائے۔

اجلاس میں اسٹیٹ گیسٹ ہاؤسز لاہور، کراچی میں فائیو اسٹار ہوٹل بنانے کی تجویز پیش کی گئی، پنجاب ہاؤس پنڈی پوائنٹ مری کو یونی ورسٹی میں تبدیل کرنے کی تجویز پر غور کیا گیا۔

اجلاس میں پنجاب ہاؤس، گورنر ہاؤس انیکسی راولپنڈی میں آئی ٹی پارک، انکیوبیشن سینٹر بنانے، نوّے شاہراہ قائدِ اعظم کی عمارت کرافٹس میوزیم اور کانفرنس ہال میں تبدیل کرنے کی تجاویز دیں گئیں۔


یہ بھی پڑھیں:  سعودی عرب سے زبردست پیکج ملا، اب آئی ایم ایف سے زیادہ قرض نہیں لینا پڑے گا: وزیراعظم


وزیرِ اعظم نے گورنر ہاؤس کی تاریخی عمارت بروئے کار لانے کے لیے ماہرین سے تجاویز طلب کر لیں، گورنر ہاؤس لاہور کے باغات اور گراؤنڈز کو پبلک کے لیے کھولنے کا فیصلہ کیا گیا، وزیرِ اعظم نے گورنر ہاؤس لاہور کی بیرونی دیوار کو مسمار کرنے کی ہدایت جاری کی، انھوں نے کہا کہ اس بات کو یقینی بنایا جائے کہ عمارت سے منسلک گرین ایریاز متاثر نہ ہوں۔

اجلاس میں گورنر ہاؤس پشاور کو خواتین کے لیے پارک اور میوزیم بنانے کی منظوری دی گئی، گورنر ہاؤس نتھیا گلی کو بوتیک ہوٹل بنانے کے لیے استعمال میں لانے، 25 ایکٹر پر محیط گورنر ہاؤس کوئٹہ کو بھی خواتین کے لیے پارک بنانے کا فیصلہ کیا گیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں