The news is by your side.

Advertisement

اگر مدت پوری کی، تو سرکاری اسپتالوں کو نجی اسپتالوں کے معیار پر لے آئیں گے: وزیر اعظم

لاہور: وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ پاکستان کے ہر سرکاری اسپتال میں شوکت خانم اسپتال کا کلچر لائیں گے.

ان خیالات کا اظہار انھوں نے شوکت خانم اسپتال کی فنڈریزنگ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ مدت پوری کی تو سرکاری اسپتالوں کو نجی اسپتالوں جیسا بنا دیں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ شوکت خانم اسپتال میں 75 سے 80 فی صد مریضوں کامفت علاج ہوتا ہے، ہر مریض ڈاکٹر کے لئے وی آئی پی ہوتا ہے، پورے پاکستان میں تمام سرکاری اسپتالوں میں یہی کلچر لے کر آئیں گے، سرکاری اسپتالوں کو بھی پرائیویٹ اسپتال کے معیار کے برابر لایا جائے گا.

انھوں نے کہا کہ سرکاری اسپتالوں میں سزا جزا کا نظام قائم کرنے سے ہی نظام بہتر ہوگا، سرکاری اسپتالوں کے معیار کی بہتری سےغریب افراد کا اچھاعلاج ممکن ہوگا.

وزیراعظم نے کہا کہ سرکاری اسپتالوں کا معیار ہرصورت بہتر کریں گے، سرکاری اسپتالوں کی بہتری میں کسی رکاوٹ کوبرداشت نہیں کریں گے.

انھوں نے کہا کہ شوکت خانم بین الاقوامی معیارکا اسپتال ہے، اس پرخوشی ہے، شوکت خانم پشاوراسپتال میں خطے کی جدیدترین سہولیات موجود ہیں.

بعد ازاں وزیر اعظم عمران خان نے ٹویٹ کیا، جس میں انھوں نے کہا کہ آج فنڈریزنگ افطارپر 20کروڑ روپےکےعطیات دیےگئے، یہ عطیات کینسر کے مریضوں کےمفت علاج کیلئے استعمال ہوں گے۔

صوبائی منصوبوں میں پرائیویٹ سیکٹر کی شمولیت


قبل ازیں وزیراعظم نے وزیراعلیٰ پنجاب کےساتھ صوبائی کابینہ اجلاس کی مشترکہ صدارت کی. اس موقع پر انھوں نے کہا کہ منصوبوں میں پرائیویٹ سیکٹر کو شامل کرنے پر خصوصی توجہ دی جائے، پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ کے مختلف ماڈلز  لاگو کیے جائیں.

وزیر اعظم نے کہا کہ ترقیاتی منصوبوں میں ہنرمندافراد کے لئے روزگار کے مواقع پیدا کیے جائیں، ون ونڈو آپریشن کےتحت سرمایہ کاروں کوسہولت فراہم کی جائے.

ان کا کہنا تھا کہ حکومت کاروبار کو آسان بنانے پر خصوصی توجہ دے رہی ہے.

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں