The news is by your side.

Advertisement

این آر او کے باعث قرضوں میں اضافہ ہوا، ملک کو اس دلدل سے نکالنا چاہتے ہیں: وزیر اعظم

اسلام آباد: وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ ملک کو قرضوں کی دلدل سے نکالنا چاہتے ہیں،  ملک کو  اپنے پیروں پر کھڑا کرنا ہے۔  این آراو کے باعث ملک کے قرضوں میں اضافہ ہوا.

تفصیلات کے مطابق وزیر اعظم نے قرضوں کے بوجھ سے نکالنے کے عزم کا اعادہ کر دیا.  ان  کا کہنا ہے کہ سابق حکمرانوں پر عوام کو اعتماد نہیں تھا.

عوام یہ سمجھتے ہیں کہ ان کے ٹیکسوں کا پیسہ صحیح جگہ خرچ نہیں ہوتا، ہمیں عوام کو یقین دلانا ہوگا کہ اب ایسا نہیں ہوگا، ملک میں ٹیکس کلچر کو فروغ دینا چاہتے ہیں، ایف بی آر کو کی سمت ٹھیک کرنی ہوگی.

انھوں نے کہا کہ ترقی یافتہ ملکوں میں عوام کا پیسہ عوام پر ہی خرچ ہوتا ہے، اب پاکستانی عوام کو احساس دلانا ہے کہ آپ کا پیسہ آپ پر خرچ ہوگا. قوم چاہے تو 8 ہزار ارب روپے ٹیکس سالانہ آسانی سے اکٹھا کرسکتے ہیں۔

عوام کو کہتا ہوں، آپ ایسیٹ ڈکلیریشن اسکیم میں آئیں، یقین دلاتا ہوں ایف بی آر یا کوئی ادارہ آپ کوتنگ نہیں کرے گا، اسکیم کی خود نگرانی کررہا ہوں

وزیر اعظم

  عوام ایمنسٹی اسکیم سے فائدہ اٹھانا چاہتے ہیں، کرپشن کی وجہ سے مہنگائی، بے روزگاری بھی ہوتی ہے، کرپٹ رولنگ ایلیٹ نے ایف بی آر کو تباہ کیا، چھوٹی اور درمیانی انڈسٹری کی سب سےزیادہ تباہی ہوئی.

انھوں نے کہا کہ بزنس کمیونٹی پیسہ بنائے گی، تو عوام کو بھی روزگار ملے گا، ہمیں اپنی بزنس کمیونٹی کو اوپر  لانا ہے، عوام کو کہتا ہوں، آپ ایسیٹ ڈکلیریشن اسکیم میں آئیں، یقین دلاتا ہوں ایف بی آر یا کوئی ادارہ آپ کوتنگ نہیں کرے گا، اسکیم کی خود نگرانی کررہا ہوں.

مزید پڑھیں: وزیر اعظم کی مہنگائی میں اضافے کے خلاف خصوصی مہم کی ہدایت

وزیر اعظم نے کہا کہ جب حکمران قربانی نہیں دیتے تو قوم بھی قربانی نہیں دیتی، کابینہ کےاخراجات میں 10 فیصد کمی کی، پہلی بارمسلح افواج نےاپنے بجٹ میں اضافہ نہیں کیا.

انھوں نے کہا جو لوگ سائیکلوں پر جاتے تھے، آج بڑی بڑی گاڑیوں میں گھومتے ہیں، جن کو جیل میں ڈالنا چاہیے، ان کا پروڈکشن آرڈر جاری کیا جارہا ہے، جن کے اکامے ہیں، وہ  واپس نہیں آتے. چھوٹے لوگ جیلوں میں سڑ رہے ہیں ،ملک ایسے کیسے آگے بڑھے گا.

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں