The news is by your side.

کرپشن سے متعلق روز نیا انکشاف ہوتا ہے، 375 ارب روپے کے جعلی اکاؤنٹس پکڑے گئے: وزیراعظم

قانونی طریقے بیرون ملک پیسہ بھیجا جائے، تو آئی ایم ایف کی ضرورت نہیں ہوگی

اسلام آباد:  وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ کرپشن سے متعلق روز نیا انکشاف ہوتا ہے، 375 ارب روپے کے جعلی اکاؤنٹس پکڑے گئے۔

تفصیلات کے مطابق تحریک انصاف کی حکومت کے سو روزہ پلان مکمل ہونے پر اسلام آباد کے جناح کنونشن سینٹر تقریب منعقد ہوئی، جس میں  وزیراعظم نے حکومتی اقدامات اور منصوبوں سے آگاہ کیا۔

وزیراعظم جب تک اداروں کو تباہ نہ کرے کرپشن نہیں کرسکتا

وزیراعظم عمران خان

وزیر اعظم نے کہا ہے کہ  بشریٰ بیگم نےمشکل وقت میں بہت ساتھ دیا، 100دنوں میں صرف ایک چھٹی کی،  22سال اپوزیشن میں رہا، انسان صرف کوشش کرسکتا ہے، کامیابی اللہ دیتاہے، 100دن میں یہی کوشش کی ایسی پالیسی بنے، جس سےعام آدمی کوفائدہ ہو۔

اس موقع پر وزیراعظم نے کہا کہ تعلیم پر خصوصی پلان لے کر آرہےہیں، چاہتے ہیں کہ پورےملک میں ایک ہی نظام تعلیم ہو،  یکساں نظام تعلیم سےغریب کابچہ بھی پڑھ کر اوپر آسکتا ہے، نجی اسپتالوں میں امیروں کا، پرائیویٹ اسپتالوں میں امیر افراد کاعلاج ہوتا ہے، چاہتےہیں، پرائیویٹ اورسرکاری اسپتالوں میں علاج کامعیارایک ہو، سرکاری اسپتالوں کوٹھیک کرنےکے لئے ٹاسک فورس بنائی گئی ہے، پاکستان میں غریب افراد کوصحت کارڈدینےکافیصلہ کیاہے۔


مزید پڑھیں: حکومت کی 100 روزہ کارکردگی، مفصل رپورٹ


وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ بدعنوانی غربت پیدا کرتی ہے، امیراورغریب میں فرق ہی کرپشن کا نتیجہ ہے، میرا بنیادی پلان یہی تھا کہ کرپشن کا خاتمہ ہو، کرپشن کی وجہ سےہم پیچھےرہ گئے ہیں، کرپشن کی وجہ سےادارےتباہ ہوجاتے ہیں، پیسہ بنانے کے لئےاداروں کااستعمال کرتےہیں۔

انھوں نے کہا کہ نیب حکومت کے نیچے نہیں، نیب آزادادارہ ہے، نیب مزید بہتر کام کرسکتا ہے۔ یہاں عوام کو اندازاہ ہی نہیں تھا کہ کس سطح کی چوریاں ہوئی ہیں، وزیراعظم جب تک اداروں کو تباہ نہ کرے کرپشن نہیں کرسکتا۔

چاہتے ہیں کہ پورےملک میں ایک ہی نظام تعلیم ہو، یکساں نظام تعلیم سےغریب کابچہ بھی پڑھ کر اوپر آسکتا ہے

وزیراعظم عمران خان

انھوں نے کہا کہ پچھلی حکومتوں کے قرضوں کی قسطیں اتارنے کے لئے مزید قرضے لینے پڑے، کرپشن سےمتعلق ہر روز نیاانکشاف ہوتا ہے، 26 ممالک کے ساتھ ایسٹ ریکوری کے لئے معاہدے کیے، ہم 12ارب ڈالر کے  پیچھے بھاگ رہے ہیں، 26ممالک ہونے والے معاہدوں سے  پتا چلا کہ پاکستانیوں کے 11 ارب ان ڈکلیئرڈا ثاثے پڑے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ ملک کےسابق وزیراعظم اور وزیر اقامے لے کربیٹھےتھے، ایف آئی اے نے 375 ارب روپےکےجعلی اکاؤنٹس پکڑے ہیں، ہماری حکومت، پہلی حکومت ہے، جو منی لانڈرنگ پرہاتھ ڈال رہی ہے، اب کوئی بھی منی لانڈرنگ کرے گا، اسے  مشکل کا سامنا کرنا پڑے گا۔ 

وزیراعظم نے کہا کہ دبئی والے اقامے والوں کے بینک اکاؤنٹ نہیں بتاتے، پاکستانی شہریوں کے اکاؤنٹس کی معلومات دیتے ہیں، اب پتا لگا کہ باہر کی بینکوں میں رکھاپیسہ چھپانےکے لئے اقامے لیے گئے، جعلی اکاؤنٹس پکڑے گئے تو انھیں جمہوریت خطرے میں نظر آنے لگتی ہے۔

وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ ہرسال 85ارب روپے کی بجلی چوری ہوتی ہے، اب تک 6 ہزار ایف آئی آرزبڑےبجلی چوروں پرکاٹی ہیں، بجلی مہنگی کی ایک بڑی وجہ بجلی کا چوری ہونا ہے، غریبوں کے لئے5 ارب روپےسےگھر بنائیں گے، غربت کےخاتمے کے لئےایک بہترین منصوبہ لے کر آرہےہیں، دیہی علاقوں میں غربت مٹاؤ پروگرام لے کر آرہے ہیں چھوٹے کسانوں کو قرضےدے کران کی مددکرنی ہے، چھوٹے کسانوں کو سبسڈی دیں گے جس سے وہ اوپر آسکیں، جعلی اکاؤنٹس پکڑے گئے تو ان کو جمہوریت خطرے میں پڑی نظر آنے لگی۔

باہر کی بینکوں میں رکھاپیسہ چھپانےکے لئے اقامے لیے گئے۔

وزیراعظم عمران خان

وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ ہرسال 85ارب روپے کی بجلی چوری ہوتی ہے، اب تک 6 ہزار ایف آئی آرزبڑےبجلی چوروں پرکاٹی ہیں، بجلی مہنگی کی ایک بڑی وجہ بجلی کا چوری ہونا ہے۔

انھوں نے کہ کہا 40لاکھ بچوں کو وہ غذا دیں گے، جس سے ان نشو نما بڑھے، زچہ بچہ کے لیے تین سال اسپیشل غذائی پروگرام شروع کیا جائے گا، غریبوں کے لئے5 ارب روپےسےگھر بنائیں گے، دیہی علاقوں میں غربت مٹاؤ پروگرام لے کر آرہے ہیں چھوٹے کسانوں کو قرضےدے کران کی مددکرنی ہے، چھوٹے کسانوں کو سبسڈی دیں گے جس سے وہ اوپر آسکیں۔


مزید پڑھیں: پانچ سال میں ایک کروڑ نوکریاں ضرور دیں گے، وزیرِ خزانہ اسد عمر


وزیر اعظم نے کہا ہماری حکومت نے قبضہ مافیا سے350ارب کی زمین واگزار کرائی ہے،  پنجاب میں 88 ہزارایکٹر زمین قبضہ مافیا سے چھڑائی ہے، پہلی باربجلی چوری کرنے والوں کےخلاف آپریشن شروع کیے۔

وزیر اعظم نے کہا کہ ہمارےپاس ایک ہزار کلومیٹرتک سمندرہے، لیکن مچھلی کی برآمدات صفر ہیں، فشریز کی صنعت پر بہت کام کرنے والے ہیں، کسانوں کوجانورپالنے کے لئے پیسے دیں گے، ہم چھوٹے کسانوں کولیزپر مشینیں دیں گے، سیم والےعلاقوں میں جھینگا فارمنگ کی جاسکتی ہے۔

انھوں نے کہا کہ ملائیشیا ہم سے پیچھےتھا، آج وہ ہم سےآگےنکل گیا، ملائیشیاکےسرمایہ کارحلال گوشت میں سرمایہ کاری کرنا چاہتے ہیں، دنیا کی حلال گوشت مارکیٹ میں پاکستان کاکوئی حصہ نہیں، کاروباری افراد کے لیے سہولتیں پیداکریں گے،  سرمایہ کاری، برآمدات، قانونی طریقے بیرون ملک پیسہ بھیجا جائے تو  آئی ایم ایف کی ضرورت نہیں ہوگی، ملک میں ٹیکس اکٹھا نہ ہونے کی وجہ سے بوجھ عوام پرپڑتا ہے۔ْ

انھوں نے کہا کہ حکومت ایف بی آرمیں اصلاحات کررہی ہے، سرکار  اب اسمگلرزپربھی ہاتھ ڈالنے والے ہیں، پاکستان میں سیاحت کوفروغ دیا جائے تو بہت پیسہ آئے گا، پاکستان کے شمالی علاقے سیاحت کے لئے بہت بہترین ہیں، پہاڑ ی علاقوں میں سیاحت کی وجہ سےغربت ختم کی جاسکتی ہے، بیواؤں کے لئے جائیداد کاخصوصی قانون لارہے ہیں، سمندرپار پاکستانیوں کی جائیداد کےتحفظ کا بھی قانون لارہے ہیں، اسپیشل قانون کےتحت غریب ملزم کے لئےحکومت وکیل کرے گی، بدعنوانی پکڑنے کے لئے وسل بلوئر ایکٹ لا رہے ہیں۔ کرپشن کی نشان دہی کرنے والوں کو 20 فیصد ملے گا۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ وزارتوں کو بچت کی خصوصی ہدایات کی ہیں، ہماراتنخوا دارطبقہ پریشان ہے،چیزوں کی قیمتوں میں اضافہ ہوا، تمام وزارتوں کوکہاہےاپنی خرچےکم کریں، عوام کے پاس کھانے کو نہیں اور ہم سرکاری پیسہ اڑائیں، گورنرکے پی نے13 کروڑروپے بچا لیے، وزیراعظم ہاؤس نے3ماہ میں 15کروڑروہے بچائے ہیں۔

تقریب کا آغاز تلاوت کلام پاک سے ہوا، عمران خان کے خطابات، غیر ملکی دوروں میں کامیابیوں پر مشتمل ڈاکیومنٹری بھی دکھائی گئی۔ تقریب سے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی، وزیر خزانہ اسد عمر  اور وفاقی مشیر شہزاد اکبر نے بھی خطاب کیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں