The news is by your side.

Advertisement

کرونا سے بچاؤ اور معاشی عمل کی روانی میں توازن رکھنا ہے، وزیراعظم

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ کرونا سے بچاؤ اور معاشی عمل کی روانی میں توازن رکھنا ہے۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ کرونا کے دوران ہم نے تمام طبقوں کے لیے حکمت عملی بنانا ہوگی، ہم نے غریب اور کمزور طبقوں کو خاص طور پر مدنظر رکھنا ہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ مساجد سے متعلق لائحہ عمل علما کی مشاورت سے طے کیا گیا، عمل درآمد یقینی بنانے کی ذمہ داری علمائے کرام نے خود لی ہے۔

عمران خان نے کہا کہ کرونا کی روک تھام کے لیے سماجی فاصلہ ہر فرد کی ذمہ داری ہے، رمضان کے آئندہ دنوں میں عوام کی ضروریات پر لائحہ عمل تشکیل دیا جائے گا۔

مزید پڑھیں: تاجروں کا 3 ماہ کا بجلی کا بل حکومت ادا کرے گی، حماد اظہر

واضح رہے کہ اس سے قبل وزیراعظم کی زیر صدارت کرونا وائرس کی صورتحال سے متعلق جائزہ اجلاس ہوا جس میں حماد اظہر، اسد عمر، خسرو بختیار، فخر امام، عمر ایوب، ظفر مرزا، ڈاکٹر معید یوسف، چیئرمین این ڈی ایم اے ودیگر سینئر افسران شریک تھے۔

وفاقی وزیر صنعت و پیداوار حماد اظہر نے وزیراعظم کو مزدوروں کے لیے 75 ارب روپے کے پیکیج کی تفصیلات سے آگاہ کیا، عمران خان کو دوسرے مرحلے میں اسٹیل سمیت دیگر کھولے جانے والی صنعتوں پر بریفنگ دی گئی۔

وزیراعظم کو بریفنگ دی گئی کہ احساس پروگرام کی معاونت سے 40 سے 60 لاکھ افراد پیکیج سے مستفید ہوں گے، چھوٹے کاروبار کے لیے 3 ماہ کا بجلی کا بل حکومت ادا کرے گی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں