The news is by your side.

Advertisement

ہم دنیا کی توجہ کشمیریوں کی جانب دلانا چاہتےہیں، جنھیں تشدد اور بدسلوکی کا سامنا ہے ،وزیراعظم

دنیا مقبوضہ کشمیرمیں ممکنہ قتل عام کوروکنے کے لیےبھی آگے آناچاہیے

اسلام آباد : وزیراعظم عمران خان نے کہا مذہبی بنیادوں پر تشدد کا نشانہ بننے والوں کے پہلے عالمی دن کے موقع پر ہم دنیا کی توجہ لاکھوں کشمیریوں کی جانب مبذول کروانا چاہتے ہیں ، جنھیں تشدد اور بدسلوکی کا سامنا ہے، مقبوضہ کشمیرمیں ممکنہ قتل عام کوروکنے کے لیے بھی آگے  آناچاہیے۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے بیان میں کہا آج مذہب کی بنیادپرتشددکانشانہ بننے والوں کاپہلاعالمی دن ہے، آج کے دن ہم دنیا کی توجہ بھارت کے جبرواستبداد میں گھرے لاکھوں کشمیریوں کی جانب مبذول کروانا چاہتے ہیں جنہیں توہین و تشدد کا سامنا ہے اور ان کے بنیادی حقوق اورآزادی سے محروم رکھا گیا ہے۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ قابض بھارتی افواج نے کشمیریوں کوعیدالاضحی اورمذہبی رسومات کی ادائیگی سےمحروم رکھا، دنیامذہب اورعقیدے کی بنیاد پرتشددکا شکارافرادسےاظہاریکجہتی کررہی ہے، اسے مقبوضہ کشمیرمیں ممکنہ قتل عام کوروکنے کے لیےبھی آگے آناچاہیے۔


یاد رہے وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ بھارت سے مذاکرات کی بہت کوشش کرلی اب بھارت سے مذاکرات کا کوئی سوال پیدا نہیں ہوتا۔بھارت نے مذاکرات کی پیشکش کو پاکستان کی کمزوری سمجھا۔

مزید پڑھیں : بھارت سے مذاکرات کی بہت کوشش کی،اب سوال ہی نہیں پیدا ہوتا،عمران خان

عمران خان نے کہا تھا خدشہ ہے بھارت پاکستان پرحملے کے بہانے ڈھونڈے گا، حملہ ہواتوبھارت کوبھرپورجواب دینے پرمجبور ہوں گے، دوجوہری طاقتوں میں جنگ ہوئی تو کچھ بھی ہوسکتا ہے۔اس وقت جونازک صورتحال ہے وہ صرف پاکستان نہیں پوری دنیا کے لئے خطرہ ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ وزیراعظم نے کہا کہ کشمیرمیں مسلم اکثریتی علاقوں میں ہندوؤں کوآباد کرنےکی سازش کی جارہی ہے۔ اسی لاکھ سے زائد افراد کی زندگی داؤپر لگی ہوئی ہے، کشمیری مسلمانوں کے قتل عام کا خدشہ ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں