The news is by your side.

Advertisement

بیورو کریسی کی غیر سنجیدگی پر وزیر اعظم برہم

اسلام آباد: بیورو کریسی کی غیر سنجیدگی پر وزیر اعظم عمران خان برہم ہوگئے اور ایکشن لینے کی تیاری شروع کردی، وزیر اعظم ہاؤس کی جانب سے تادیبی خط وفاقی سیکریٹریز اور چیف سیکریٹریز کو بھجوا دیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق وزیر اعظم عمران خان نے وفاقی سیکریٹریز، چیف سیکریٹریز اور آئی جیز سے اجلاسوں کے منٹس طلب کرلیے۔ وزیر اعظم آفس کی طرف سے وزارتوں اور صوبوں کے سیکریٹریز اور پولیس سربراہان کو خط لکھ دیا گیا۔

خط میں کہا گیا ہے کہ وزیر اعظم کی ہدایات کی روشنی میں اب تک جو اجلاس بلائے اس کا ریکارڈ دیا جائے۔

اس سے قبل 28 دسمبر 2018 کو لکھے گئے خط میں وزیر اعظم نے مختلف ہدایات کی تھیں جبکہ سٹیزن پورٹل کو وزارتوں اور اداروں میں نافذ العمل کرنے کی بھی ہدایت تھی۔

حالیہ خط میں کہا گیا ہے کہ وزارتوں کے سیکریٹریز اور چیف سیکریٹریز کو ماہانہ اجلاس کی ہدایت کی تھی تاہم وزارتوں اور صوبوں کے سربراہان نے سٹیزن پورٹل سے متعلق کوتاہی برتی۔ وزارتوں اور اداروں کے سربراہان کی کارکردگی امیدوں پر پوری نہیں اتری۔

خط میں کہا گیا کہ شہریوں کی شکایات کے حل میں افسران نے کوتاہی برتی، کوتاہی کی وجہ سے 2 لاکھ سے زائد شکایات کو دوبارہ کھولا گیا، پی ایم ڈیلیوری یونٹ کے مطابق شکایات کی نگرانی نہیں ہوئی۔

خط کے مطابق فاقی سیکریٹریز اور اداروں کے فوکل پرسنز میں رابطے کا فقدان ہے، سربراہان شکایات سے متعلق اجلاسوں کے منٹس فراہم کریں۔ وفاقی و چیف سیکریٹریز اور آئی جیز منٹس پر دستخط شدہ سرٹیفیکٹ جمع کروائیں، اجلاس منعقد نہ کروانے والے افسران کے خلاف ایکشن ہوگا۔

خط کے ساتھ بیورو کریسی کو اجلاسوں سے متعلق تصدیقی سرٹیفیکٹ بھی بجھوا دیے گئے ہیں، وزیر اعظم آفس نے 14 روز میں سرٹیفیکٹ واپس بھجوانے کی ہدایت کردی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں