The news is by your side.

Advertisement

‘فضل الرحمان کے دھرنے کو سیریس نہ لیں’

اسلام آباد : وزیراعظم عمران خان نے کورکمیٹی کو ہدایت کی ہے کہ فضل الرحمان کےدھرنےکوسیریس نہ لیں ، مارچ کےمتعلق کمیٹی قائم کردی وہی معلامات دیکھے گی ، احتجاج پر گفتگو سے وقت ضائع نہیں کرنا چاہتے۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت کورکمیٹی اجلاس کی اندرونی کہانی سامنے آگئی ، زرائع کا کہنا ہے کہ ارکان نےآزادی مارچ سے نمٹنے کے لیے مختلف تجاویز دیں ، وزیراعظم نے کورکمیٹی کو ہدایت کی ‘فضل الرحمان کے دھرنے کو سیریس نہ لیں اور زیادہ اہمیت نہ دی جائے۔

وزیراعظم ذرائع کا کہنا ہے کہ مارچ کے متعلق کمیٹی قائم کردی وہی معلامات دیکھےگی، احتجاج پرگفتگوسےوقت ضائع نہیں کرناچاہتے۔

وزیراعظم نے حکومتی ترجمانوں کی کارکردگی پربھی بات کی اور کہا ہمارامؤقف میڈیاپردرست اندازمیں پیش نہیں ہورہا جبکہ کورکمیٹی نے حکومتی مؤقف بھرپوراندازمیں پیش کرنے کیلئے بھی تجاویز دیں۔

یاد رہے وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت کورکمیٹی اجلاس میں مولانا فضل الرحمان سے مذاکرات کیلئے کمیٹی بنانے کا فیصلہ کرتے ہوئے پرویز خٹک کو کمیٹی کا سربراہ مقرر کردیا تھا۔

مزید پڑھیں : حکومت کا مولانا فضل الرحمان سے مذاکرات کیلئے کمیٹی بنانے کا فیصلہ

وزیراعظم نے کہا تھا ملک کواس وقت اوربھی خطرات درپیش ہیں، ہم کشمیر کا مقدمہ عالمی فورمز پر لڑ رہےہیں، حکومت کو معیشت اور کشمیر جیسے بڑے چیلنجز کا سامنا ہے، حکومت اپوزیشن کے جائز تحفظات ضرور سنے گی۔

بعد ازاں مولانا فضل الرحمان نے حکومت کی جانب سے مذاکرات کی پیش کش کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر مذاکرات ہوں گے تو پہلے حکومت کو استعفیٰ دینا ہوگا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں