The news is by your side.

Advertisement

‘ 8ماہ سے زائد عرصے سے کرفیو، دنیا اب کشمیری عوام کی تکالیف کا اندازہ لگا سکتی ہیں’

اسلام آباد : وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ مقبوضہ کشمیرمیں کرفیو8 ماہ سے زائد عرصےسےجاری ہے، دنیا اب کشمیری عوام کی تکالیف کا اندازہ لگا سکتی ہیں، جنہیں بدترین جبر کا سامنا ہے۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے پیغام میں کہا کہ مقبوضہ کشمیرمیں بغیر طبی،مالی،مواصلاتی،غذائی امداد کے غیر انسانی سیاسی وعسکری کرفیو8ماہ سےزائد عرصے سے جاری ہےاور ہندو توا کی پیروکار مودی سرکار نے کشمیریوں کو سہولتوں سے محروم رکھا۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ ناکہ بندی کے دوران اہل کشمیربنیادی اشیائےضروریہ سے بھی یکسرمحروم ہیں، دنیا کے مختلف حصوں میں وباکے دوران بندشوں کیخلاف مظاہرے ہورہےہیں، دنیااب کشمیری عوام کی تکالیف کااندازہ لگا سکتی ہیں جنہیں بدترین جبر کا سامنا ہے۔

یاد رہے وزیراعظم عمران خان نے اپنے پیغام میں کہا تھا کہ بھارتی کوشش کشمیریوں کے حق خود ارادیت کے خلاف اقدام ہے، پاکستانی بھارتی ریاستی دہشت گردی بے نقاب کرتا رہے گا، اس وقت عالمی برادری کی توجہ کرونا وائرس پر مرکوز ہے بھارت اس صورتحال کا فائدہ اٹھانا چاہتا ہے۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ ہم کشمیریوں کے ساتھ کھڑے ہیں، کشمیر میں آبادی تناسب تبدیلی کی بھارتی کوشش مسترد کرتے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں