The news is by your side.

Advertisement

غریبوں سے زمین خالی نہیں کرائی جائےگی، وزیراعظم عمران خان

اسلام آباد : وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے رہائشی اسکیم سےغریب فائدہ اٹھاسکیں گے اور اسکیم قبائلی علاقوں میں بھی لے کرجائیں گے، اسلام آباد میں پانچ سو ارب کی زمین خالی کرائی، غریبوں سے زمین خالی نہیں کرائی جائےگی۔

تفصیلات کے مطابق پچاس لاکھ گھروں کی تعمیرکیلئے پاکستان اورعالمی بینک میں مفاہمت کی یادداشت پر دستخط کی تقریب کا انعقاد کیا گیا، تقریب سے خطاب میں وزیراعظم عمران خان نے کہا ہم نے 50 لاکھ گھر 5 سال میں بنانے کا فیصلہ کیا، پہلے پاکستان میں کسی نے اس طرح کا فیصلہ کیا، پاکستان میں ایک کروڑگھروں کی ضرورت ہے، ہم اسٹیٹ بینک کی مدد سے ہاؤسنگ اسکیم کی تیاری کررہےہیں۔

پاکستان میں ایک کروڑگھروں کی ضرورت ہے

وزیراعظم کا کہنا تھا ایک باریہ پراجیکٹ شروع ہوگیا تو اس میں ہرسال اضافہ ہوگا، درخت لگانے کا منصوبہ شروع ہوا تو پہلے دوسال انفرااسٹرکچرمیں وقت لگا،  بعد میں 3سال کی ہماری رفتارکو عالمی اداروں نےسراہا ، ہماری پوری کوشش ہےکہ نجی سیکٹراس منصوبے میں حصہ لے۔

عمران خان نے کہا ہاؤسنگ ایساسیکٹر ہے جس سے 40صنعتیں منسلک ہیں، ایک غریب آدمی کے پاس کبھی پیسہ نہ آتاکہ گھربناسکے، اب تک صرف ایلیٹ کا پاکستان ہی بنا ہے کوئی بھی سیکٹر اٹھالیں، تعلیم ہو، رہائش ہو یا علاج سب کچھ ایک چھوٹے سے طاقتور طبقے کے لیے ہے۔

ان کا کہنا تھا یہ ایک ایسی رہائشی اسکیم ہے، جس سے غریب فائدہ اٹھاسکیں گے، ٹیکس ہم نہیں دیتے لیکن چیئریٹی میں ہم سب سے اوپر ہیں، جب ہم اسکیم شروع کریں گے تو لوگ ہمارے ساتھ تعاون کریں گے، اسلام آباد میں کون غریب اپناگھر بناسکتا ہے۔

  رہائشی اسکیم سےغریب فائدہ اٹھاسکیں گے

وزیراعظم نے کہا بناسہولتوں کےکچی آبادیاں ہیں جن کےلیےکوئی پالیسی نہیں، اشرافیہ اپنی آبادیوں کےگرد دیوار بناکر ان کو الگ کردیتی ہے، پاکستان میں فیصلہ کیا ہے کہ بلند عمارتوں میں رہائش کو فروغ دیاجائے، کوشش ہے زراعت کے لیے زمین دستیاب رہے۔

  فیصلہ کیاہے کہ بلندعمارتوں میں رہائش کوفروغ دیاجائے

عمران خان کا کہنا تھا ایئرپورٹ کےعلاقوں کوچھوڑکرکوشش کریں گے بلندعمارتوں کوفروغ دیں، اسلام آبادمیں500ارب کی زمین سے قبضے چھڑوائے ہیں، غریبوں سے زمین خالی نہیں کرائی جائےگی، سی ڈی اے کی ملی بھگت سے قبضہ کی گئی زمینیں واگزار کرائیں ، سرکاری زمینوں کو ذاتی ملکیت سمجھ کر قبضےکرائےگئے، سرکاری زمینوں پرتجارتی سرگرمیوں کوفروغ دیں گے۔

انھوں نے مزید کہا رہائشی اسکیم کو قبائلی علاقوں میں بھی لےکرجائیں گے، گھرحکومت نے نہیں بنانےصرف نجی سیکٹر کو سہولتیں دینی ہیں، نہ صرف سمندرپار پاکستانیوں بلکہ چین سے بھی بہت اچھار دعمل آیاہے، حکومت خالی سرکاری زمینوں کا پوچھ رہی تھی توسرکاری افسر چھپارہےتھے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں