The news is by your side.

Advertisement

خواجہ آصف کی مبینہ کرپشن کا کیس وزیراعظم انکوائری کمیشن بھیجنےکا فیصلہ

اسلام آباد : مسلم لیگ ن کے رہنما خواجہ آصف کی مبینہ کرپشن اور منی لانڈرنگ کیس وزیراعظم انکوائری کمیشن میں پیش کرنے فیصلہ کر لیا گیا، جس کا اعلان کچھ دیر بعد پریس کانفرنس میں کیا جائے گا۔

تفصیلات کے مطابق مسلم لیگ ن کے رہنما احسن اقبال کے بعد خواجہ آصف بھی مشکل میں آگئے، خواجہ آصف کی مبینہ کرپشن اور منی لانڈرنگ کا کیس وزیراعظم انکوائری کمیشن میں پیش کرنے فیصلہ کر لیا گیا ہے۔

وزیراعظم کےمعاون خصوصی عثمان ڈارکی قانونی ماہرین سے مشاورت شروع کر دی۔

ذرائع کا کہنا ہے وزیراعظم کے معاون خصوصی عثمان ڈار کو پارٹی قیادت کی جانب سے گرین سگنل مل گیا ہے جس کا اعلان کچھ دیر بعد پریس کانفرنس میں کیا جائے گا۔

خواجہ آصف کی مبینہ کرپشن اور منی لانڈرنگ کی تفصیلات انکوائری کمیشن میں پیش کی جائیں گی اور غیر ملکی کمپنیوں سے رابطے اور کروڑوں روپے کی مشکوک بینک ٹرانزیکشنز کی چھان بین ہو گی۔

تفتیش کی جائے گی کہ بیوی اور بچوں کے غیر ملکی اکاونٹس میں رقم کی منتقلی کن ذرائع سے کی گئی؟ وزارتوں میں ملنے والے اربوں روپے کا فنڈ کہاں خرچ کیا گیا؟ اور بطور وفاقی وزیر قومی خزانے کے استعمال کی تحقیقات بھی کی جائیں گی۔

مزید پڑھیں : آمدن سے زائد اثاثہ کیس : خواجہ آصف نیب کے سامنے پیش، بیان ریکارڈ کرادیا

یاد رہے رواں سال اپریل میں آمدن سے زائد اثاثہ کیس میں سابق وزیردفاع اور پاکستان مسلم لیگ(ن) کے سینئر رہنما خواجہ آصف نے نیب کے سامنے پیش ہوکر بیان ریکارڈ کرایا تھا۔

واضح رہے گزشتہ برس عثمان ڈارنے خواجہ آصف کے خلاف تحقیقات کے لیے نیب سے رجوع کیا تھا، عثمان ڈار نے خواجہ آصف پرمنی لانڈرنگ، فارن فنڈنگ کےالزامات لگائے تھے اور خواجہ آصف کے خلاف منی لانڈرنگ کے ثبوت نیب کو فراہم بھی کیے تھے۔

قومی احتساب بیورو نے گزشتہ برس اکتوبر میں خواجہ آصف کیخلاف منی لانڈرنگ کے الزام میں تحقیقات کا آغاز کیا تھا، نیب نے خواجہ آصف اور ان کی فیملی سے تمام بینک اکاونٹس، قرض اور رقوم کی اندرون و بیرون ملک منتقلی کا ریکارڈ بھی طلب کیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں