The news is by your side.

Advertisement

کوئی میثاق جمہوریت کو تسلیم نہ کرے تو کیا کر سکتے ہیں: وزیر اعظم

مظفر آباد: وزیر اعظم نواز شریف کا کہنا ہے کہ کوئی میثاق جمہوریت تسلیم نہ کرے تو کیا کر سکتے ہیں۔ ہم تو معاہدے پر کاربند ہیں۔ جمہوریت کا مطلب ایک دوسرے کو برداشت کرنا ہے۔

تفصیلات کے مطابق وزیر اعظم نواز شریف آج مظفر آباد پہنچے جہاں ان کا استقبال صدر آزاد کشمیر محمد مسعود خان اور وزیر اعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدر نے کیا۔

اس موقع پر وزیر خزانہ اسحٰق ڈار، وزیر برائے امور کشمیر و گلگت بلتستان برجیس طاہر، وزیر تجارت خرم دستگیر اور سینیٹر پرویز رشید بھی ان کے ہمراہ تھے۔

پاکستان مسلم لیگ ن کے ٹوئٹر اکاؤنٹ کے مطابق وزیر اعظم، آزاد کشمیر کونسل کے 53 ویں بجٹ اجلاس میں شرکت کرنے کے لیے پہنچے تھے۔ وزیر اعظم نے آزاد کشمیر کونسل سے خطاب بھی کیا۔

اس موقع پر انہوں نے نام لیے بغیر مخالفین پر طنز و تنقید کی روایت برقرار رکھی۔ ان کا کہنا تھا کہ جمہوریت کا مطلب ہی ایک دوسرے کو برداشت کرنا ہے۔ کوئی میثاق جمہوریت کو تسلیم نہ کرنا چاہے تو ہم کیا کر سکتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ن لیگ کو مثالی مینڈیٹ ملا۔ ایسا مینڈیٹ قسمت سے ہی کسی جماعت کو ملتا ہے۔

وزیراعظم کا مزید کہنا تھا کہ سٹرکوں کا جتنا بڑا جال بچھ رہا ہے اس کی ملک میں کوئی مثال نہیں ملتی۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں