The news is by your side.

Advertisement

نیشنل ایکشن پلان پر غور، سیاسی اور فوجی قیادت کی بیٹھک آج ہوگی

اسلام آباد: قومی ایکشن پلان پر غورکیلئے سیاسی اور فوجی قیادت آج سر جوڑ کر بیٹھے گی، نیشنل کمانڈ اینڈ کنٹرول اتھارٹی کے اجلاس میں کم از کم حربی صلاحیت برقرار رکھنے اور جارحیت کا منہ توڑ جواب دینے کا عزم کیا گیا۔

ملکی سالمیت اور داخلی صورتحال آپریشن ضربِ عضب کی کامیابیوں اور آئندہ کے لائحہ عمل پر غور کیلئے اجلاس آج اسلام آباد میں ہوگا، وزیرِاعظم کی زیرِ صدارت اجلاس میں آرمی چیف،ا نٹلی جنس حکام ، چاروں وزرائے اعلیٰ اور اہم شخصیات شریک ہوں گی۔

اجلاس میں نیشنل ایکشن پلان کے تحت دہشتگردی کے خلاف اقدامات کا جائزہ لیا جائے گا اور اگلے مرحلے پر مشاورت کی جائے گی۔

  گزشتہ روز وزیرِاعظم نواز شریف کی زیرِ صدارت نیشنل کمانڈ اینڈ کنٹرول اتھارٹی کا اجلاس ہوا، اجلاس میں پاکستان کے ایٹمی ہتھیاروں کا معاملہ تھا، جس میں فیصلہ کیا گیا کہ کم سے کم مؤثر دفاعی صلاحیت برقرار رکھی جائے گی، پاکستان کسی بھی جارحیت کا جواب دینے کی بھرپور صلاحیت رکھتا ہے۔

اجلاس میں قومی سلامتی کے تحفظ کیلئے تمام ممکنہ اقدامات کرنے پر اتفاق کیا گیا اور پاکستان کے جوہری کمانڈ اینڈ کنٹرول پروگرام کی سلامتی پر مکمل اطمینان کا اظہار کیا گیا، نیشنل کمانڈ اینڈ کنٹرول اتھارٹی کے اجلاس میں تینوں مسلح افواج کے سربراہان، وزیردفاع، وزیرداخلہ، خزانہ ، قومی سلامتی اورخارجہ امور کے مشیروں نے شرکت کی۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں