The news is by your side.

Advertisement

وزیراعظم ملزم ہیں، مستعفی ہوں , چار جماعتی اتحاد کا مطالبہ

لاہور: مسلم لیگ (ق)، سنی اتحاد کونسل، متحدہ دینی محاذ اور پاکستان عوامی تحریک نے مشترکہ اعلامیہ میں کہا ہے کہ پاناما فیصلے کی روح کے مطابق وزیراعظم ملزم کی حیثیت اختیارکر چکے ہیں اس لیے وہ فوری طور پر اپنے عہدے سے مستعفی ہو جائیں۔

یہ مطالبہ چاروں جماعتوں نے نے ایک مشترکہ اجلاس کے بعد جاری اعلامیہ کیا جس کے مطابق اجلاس میں چوہدری شجاعت کی سربراہی میں 4 جماعتی اتحاد میں گرینڈ الائنس کی منظوری بھی دی گی اور دیگر اپوزیشن جماعتوں سے رابطوں پر بھی اتفاق کیا گیا جس کے لیے طارق بشیر چیمہ، خرم نواز گنڈا پور، حامد رضا اور ناصرعباس پر مشتمل کمیٹی تشکیل دی گئی۔


*وزیراعظم استعفیٰ دیں ،لاہور ہائیکورٹ بار کا 7دن کا الٹی میٹم


اعلامیہ کے متن کے مطابق یہ اجلاس وکلا تنظیموں کی تحریک کے اعلان کی پرزور حمایت کرتا ہے اور وزیراعظم سے فوری استعفیٰ کا مطالبہ کیا جاتا ہے کیوں کہ جے آئی ٹی کو دباؤ سےمحفوظ رکھنے کے لیے وزیراعظم کا استعفیٰ ضروری ہے۔


*میاں صاحب تھوڑی سی شرم اورحیا ہے تو استعفیٰ دیں، بلاول بھٹو


اعلامیہ میں مطالبہ کیا گیا کہ سپریم کورٹ پیش کی جانے والی جے آئی ٹی کی 15 روزہ رپورٹ کو عام کیا جانا چاہیے اور جسٹس باقر نجفی کی سانحہ ماڈل ٹاؤن رپورٹ کو فی الفور شائع کیا جائے۔


*ہم انتخاب لڑ کر مستعفی ہونے کے لئے نہیں آئے، وزیراعظم


واضح رہے پاناما کیس کے فیصلے کے بعد سے سیاسی درجہ حرارت نقطعہ عروج پر ہے جہاں ایک طرف تو حکومت کے حامی اسے اپنی فتح کہہ رہے ہیں اور جشن بھی منا رہے تھے تو دوسری طرف اپوزیشن اسے حکومت کی شکست تصور کرتے ہوئے مٹھائیاں تقسیم کر رہی ہیں اور ساتھ وزیراعظم سے مستعفی ہونے کا مطالبہ بھی زور پکڑتا جا رہا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں