site
stats
پاکستان

وزیراعظم کے زیر صدارت اجلاس میں سیکیورٹی سے متعلق اہم فیصلے

اسلام آباد : وزیراعظم محمد نوازشریف کی زیرصدارت قومی ایکشن پلان کا جائزہ لینے کے لیے اعلیٰ سطحی اجلاس ہوا۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم نوازشریف کی زیر صدارت میں ملک کی اندرونی سلامتی اور بارڈرمینجمنٹ کے لیےسول آمڈ فورسزکے29 ونگ بنانےکا فیصلہ کیا گیا جس کے لیے تمام انٹیلیجنس اداروں کے درمیان رابطوں کو مربوط اور منظم کیا جائے گا۔

اجلاس میں چوہدری نثارعلی خان، اسحاق ڈار،آرمی چیف جنرل راحیل شریف،مشیروزیراعظم سرتاج عزیز،ڈی جی آئی ایس آئی، رضوان اختر،طارق فاطمی، مشیرقومی سلامتی ناصرخان جنجوعہ،ڈی جی آئی بی اوردیگراعلی حکام نے شرکت کی۔

اس موقع پراجلاس کوبتایاگیا کہ قومی ایکشن پلان پر پیشرفت کا جائزہ لینے کے لیے ایک مانیٹرنگ ٹاسک فورس تشکیل دی جائے گی جس کے سربراہ قومی سلامتی کے مشیر جنرل ریٹائرڈ ناصر خان جنجوعہ ہوں گے۔

اس کے علاوہ سیکرٹری داخلہ،ڈی جی نیکٹا،تمام صوبوں کے چیف سیکرٹریز،آئی جی پیز،ہوم سیکرٹریزوزیر اعظم آفس کے ایک ایڈیشنل سیکرٹری کمیٹی کے رکن ہوں گے جب کہ کمیٹی میں تمام انٹیلی جنس اداروں کے نمائندے اورآرمی کی جانب سے ڈی جی ملٹری آپریشنز شامل ہوں گے۔

اجلاس میں دہشتگردوں کوفنڈنگ کے حوالے سے بھی معاملات کاجائزہ لیا گیا اوراس کے سدباب کے لیے سخت اقدامات کرنے کا فیصلہ کیا گیا اور سائبر کرائم بل پرفوری عمل درآمد کے لیے کیے گئے اقدامات کا جائزہ لیا گیا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top