The news is by your side.

Advertisement

سابق وزیراعظم توہیلی کاپٹر پر آتے جاتے تھے، انہیں غریب سے کیا غرض؟ وزیراعظم

اسلام آباد : وزیراعظم شہباز شریف کا کہنا ہے کہ سابق وزیراعظم تو ہیلی کاپٹر پر آتے جاتے تھے، انہیں غریب سے کیا غرض، لیکن میں تواسی رفتار سے کام کروں گا، جس کاعادی ہوں۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم شہباز شریف نے پشاورموڑتااسلام آبادایئرپورٹ میٹروبس کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ میٹروبس کا افتتاح میرے لئے اعزاز ہے،چین پاکستان کا عظیم دوست ہے، منصوبے میں چین، ترکی کی شرکت کا مشکور ہوں اور ترک صدر سمیت عوام کا بھی شکریہ اداکرتاہوں۔

شہباز شریف کا کہنا تھا کہ طیب اردوان مارڈرن لیڈر ہیں انھوں نے ترکی کی معیشت کو مضبوط کیا ، ترکی نے ہر مشکل وقت میں پاکستان کی مدد کی ہے، یہ منصوبہ بدقسمتی سے تعطل کا شکار رہا، اس منصوبے کا اصل تخمینہ 16ارب تھا۔

میٹروبس منصوبے کے حوالے سے وزیراعظم نے کہا کہ یہ تحفہ اسلام آباد کے شہریوں کو2017میں نوازشریف نے دیا تھا، اس منصوبے نے 2018 میں آپریشنل ہونا تھا لیکن 2018میں حکومت بدلی تو منصوبہ بدترین تاخیر کا شکارہوا۔

ان کا کہنا تھا کہ قرضوں پر سود کی ادائیگی اور تنخواہیں قومی آمدن سے ادا ہوتے ہیں، ہمارے دفاع کے اخراجات بھی بڑی حد تک قرضوں سے پورا کرتے ہیں، گھمبیر صورتحال ہے ، قومی ترقی و خوشحالی کے منصوبے قرضوں سے پورا کرتے ہیں۔

پی ٹی آئی حکومت پر تنقید کرتے ہوئے شہباز شریف نے کہا کہ اس منصوبے کو زگ زیگ بنا دیا گیا اس کو کم کرکے 12 ارب پر لایا گیا، منصوبے کیلئے فنڈز سمیت ہرچیز موجود تھی بس کمی عزم کی تھی ، 55 روپے کلومیٹر پر وہ ہیلی کاپٹر سے دفتر اوررہائش گاہ آتے جاتے تھے، ان کو کیا غرض تھی کہ غریب کا بچےکو اسکول جانا ہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ حالات ایسے ہیں کہ قومی خزانے کے 100روپے بھی ضائع نہیں کرسکتے، یہ منصوبہ 4سال تو کیا 4گھنٹے بھی تاخیر کا شکار نہیں ہوناچاہیےتھا، اورنج لائن بھی ہم نے چین کی مدد سے دن رات محنت کرکے مکمل کیا۔

ان کا کہنا تھا کہ غلطی سب سے ہوتی ہے مگر ہوش وحواس میں قوم سے کبھی غلط بیانی نہیں کروں گا، پی ٹی آئی کے وکیلوں نےاورنج لائن کیخلاف تاخیر کی کوشش کی، پی ٹی آئی کے وکیلوں نے گلے پھاڑپھاڑ کرکہا اس میں کرپشن ہے، اورنج لائن منصوبےمیں کرپشن کا ایک دھیلا بھی ثابت نہ ہوسکا۔

شہباز شریف نے بتایا کہ جسٹس(ر)جاوید اقبال کے فرزند نے سپریم کورٹ میں درخواست دی ، عدالت میں پھر کہیں بعد میں جاکر اورنج لائن کیس ودڈراہوا، یہ ہیں وہ واقعات جو سینے میں نشتر چھبوتےہیں ، اورنج لائن میں ڈھائی سال کی تاخیرہوئی، قوم سے کبھی غلط بیانی نہیں کروں گا، 4سال کی تاخیر کے بعد ہم نےمنصوبے کو4دن میں شروع کیا۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ جو قوم کی خدمت نہیں کرتے ان کو خدا حافظ کہتے ہیں ، مجھے کسی سےگلہ یادشمنی نہیں، جوقوم کیلئے کام کرتا ہے قوم انہیں دعاؤں میں یاد رکھتی ہے۔

انھوں نے خوشخبری سناتے ہوئے کہا کہ پنجاب ٹرانسپورٹ اتھارٹی سے15بسیں ادھارلی ہیں، رمضان میں عوام میٹروبس میں مفت سفر کریں کوئی ٹکٹ نہیں ہوگی، یہ ہمت کی داستان ہے کوئی رام کہانی نہیں ہے۔

شہباز شریف کا مزید کہنا تھا کہ بلٹ پروف گاڑیوں میں گھومنے والوں کو کیا احساس کہ عوام کیسے سفرکرتےہیں، آج مسافرمفت میں جائیں گے انہیں کوئی ٹکٹ نہیں لینا پڑے گا تاہم رمضان کے بعد یہ منصوبہ بہت آرگنائزڈہوگا۔

تقریب میں وزیراعظم نے کہا خدمت کا ساتھ دینا ہے یا پھرفریب کا ساتھ دیناہے، جھوٹ کا ساتھ دینا ہے یا پھر وعدوں کی تکمیل کاساتھ دینا ہے؟

ان کا کہنا تھا کہ آپ کو گھبراہٹ ہوگی مگر عوام کی گھبراہٹ ختم ہوگئی ہے، میں اسی رفتار سے کام کروں گا جس کی مجھے عادت ہے، کراچی کے عوام کے لئے کے سی آربہت اہم منصوبہ ہے، چائنیزکی خدمت میں کےسی آرکیلئےعرض کروں گا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں